تباہ کن سیلاب کے بعد مدد کی بھیک نہیں مانگیں گے ، عالمی برادری کو بڑے منصوبوں کیساتھ آگے آنا چاہئے ، وزیر اعظم 

تباہ کن سیلاب کے بعد مدد کی بھیک نہیں مانگیں گے ، عالمی برادری کو بڑے منصوبوں ...
تباہ کن سیلاب کے بعد مدد کی بھیک نہیں مانگیں گے ، عالمی برادری کو بڑے منصوبوں کیساتھ آگے آنا چاہئے ، وزیر اعظم 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ تباہ کن سیلاب کے بعد مدد کی بھیک نہیں مانگیں گے ، عالمی برادری سیلاب زدگان کی مدد کیلئے مزید بہتر اور بڑے منصوبے کیساتھ آگے بڑھے ۔

برطانوی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ   پاکستان کو مون سون میں شدید بارشوں اور پھر سیلاب کے بعد بہت سے مسائل کا سامنا ہے ، سیلاب کے باعث ایک تہائی حصہ زیر آب آگیا ،  میں نے زندگی میں  اتنی بڑی تباہی نہیں دیکھی۔پاکستانی عوام ماحولیات کے متاثر ہونے سے اپنے ہی ملک میں مہاجر بن کر رہ گئے ، اس موقع پر عالمی برادری کی عطیات اور فنڈ دینے کے وعدے ناکافی ہیں ، سیلاب سے جو تباہی ہوئی وہ ہمارے معاشی وسائل سے بہت زیادہ ہے ۔ 

 شہباز شریف نے کہا کہ ہم کسی پر الزام عائد نہیں کرتے مگر یہ تباہی ہماری وجہ سے نہیں آیا ،  کیا مجھے کشکول اٹھا کر مدد کی بھیک مانگنی چاہئے ، چین ، پیرس کلب سمیت تمام غیر ملکی قرضوں کی معطلی پر بات چیت جاری ہے ،  ہم مالی معاونت کی بات کر رہے ہیں نہ کہ مزید قرضوں کی ، امیر ممالک نے ماحولیاتی تبدیلی کی تباہی سے نمٹنے کیلئے  100 ارب ڈالرز فنڈ میں دینےکا وعدہ کیا ، وہ رقم کدھر ہے ؟،  جن ممالک نے وعدہ کیا ان کیلئے  اسے پورا کرنے کا یہ بہترین وقت ہے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -