مرد افسر کی جانب سے مبینہ طور پر ہراساں کرنے پر سوشل ویلفیئر پنجاب کی خاتون افسر نے خاتون محتسب پنجاب کو درخواست دیدی

مرد افسر کی جانب سے مبینہ طور پر ہراساں کرنے پر سوشل ویلفیئر پنجاب کی خاتون ...
مرد افسر کی جانب سے مبینہ طور پر ہراساں کرنے پر سوشل ویلفیئر پنجاب کی خاتون افسر نے خاتون محتسب پنجاب کو درخواست دیدی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) مرد افسر کی جانب سے مبینہ طور پر ہراساں کرنے پر سوشل ویلفیئر پنجاب کی 18 گریڈ کی  خاتون افسر نے خاتون محتسب پنجاب کو درخواست دیدی۔

نجی ٹی وی "جیونیوز "کے مطابق   خاتون افسر کی جانب سے کہا گیا کہ اکتوبر  2021 میں تنخواہ کا سرٹیفکیٹ لینے کیلئے ہاؤسنگ ڈیپارٹمنٹ گئی ،  افسر نے اگلے ہی روز مجھے غیر اخلاقی میسج بھیجے اور ویڈیو کال پر آنے کیلئے مجبور کیا، میں نے متعلقہ افسر کا نمبر بلاک کیا تو مجھے مختلف نمبروں سے ہراساں کرنے لگا، باز نہ آنے پر میں نے اعلیٰ افسران کو تمام ثبوت فراہم کئے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق خاتون افسر کا کہنا ہے کہ  26 ستمبر کو چیف سیکرٹری اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری کو درخواست سمیت ثبوت بھجوائے ، سیکرٹری سروسز اور سیکرٹری ہاؤسنگ کو بھی درخواست بمعہ ثبوت ارسال کی  مگر اب تک کوئی جواب نہیں ملا ، درخواست کا علم ہونے پر متعلقہ افسر نے وکیل کے ذریعے مجھے ہتک عزت کانوٹس بھجوا دیا ۔میرے پاس تمام ثبوت موجود ہیں میں انصاف چاہتی ہوں، خاتون افسر کی جانب سے کہا گیا کہ میری درخواستوں پر کسی افسر نے کوئی ایکشن نہیں لیا ، مجبوراً خاتون محتسب  کے پاس گئی ۔

نجی ٹی وی کے مطابق متعلقہ افسر نے موقف اپنایا کہ خاتون نے 50 ہزار روپے لئے مگر واپسی کے مطالبے پر الزامات عائد کر دیے ،  الزامات میں کوئی صداقت نہیں ۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -