بھارتی شہری نے درندگی کی تمام حدیں پار کردیں، اتنی چھوٹی عمر کی بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا کہ کوئی انسان ایسا تصور بھی نہیں کرسکتا

بھارتی شہری نے درندگی کی تمام حدیں پار کردیں، اتنی چھوٹی عمر کی بچی کو زیادتی ...
بھارتی شہری نے درندگی کی تمام حدیں پار کردیں، اتنی چھوٹی عمر کی بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا کہ کوئی انسان ایسا تصور بھی نہیں کرسکتا

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت میں خواتین کے ساتھ جنسی جرائم کی خبریں تو ہر روز سامنے آتی ہیں لیکن ریاست بہار سے ایسی لرزہ خیز درندگی کی خبر سامنے آئی ہے کہ انسان یہ کہنے پر مجبورہوجائے کہ واقعی اس بدقسمت ملک سے انسانیت کا جنازہ نکل چکا ہے۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق ایک محنت کش نے پولیس کو شکایت کی تھی کہ وہ اپنی 10 ماہ کی بچی کے ساتھ سویا ہوا تھا کہ بچی کو کوئی اٹھاکرلے گیا۔ بچی کے والدین اور خاندان والوں نے اسے کافی تلاش کیالیکن کوئی سراغ نہ ملا۔ پولیس نے بچی کی تلاش کے لئے مختلف ٹیمیں تشکیل دیں اور قریبی علاقے میں اسے ڈھونڈنے کا سلسلہ شروع کردیا۔ چند گھنٹوں بعد ہی خوفناک انکشاف ہوا کہ ایک ویران علاقے میں جھاڑیوں کے پیچھے شیر خوار بچی خون میں لت پت پڑی تھی۔ پولیس نے فوری طور پر بچی کو ہسپتال پہنچایا تو دل دہلا دینے والا انکشاف ہوا کہ اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی تھی۔

نوجوان پاکستانی لڑکی کو بیوٹی سیلون میں ملازمت کیلئے دبئی لیجایا گیا، لیکن پہنچتے ہی ائیرپورٹ سے سیدھا ایک ایسی جگہ پہنچادیا گیا کہ سن کر ہر انسان کانپ اٹھے، اگر آپ کو بھی کوئی ایسی پیشکش کرے تو پہلے یہ خبر ضرور پڑھ لیں

اس بھیانک واقعے کی تفتیش کے دوران پتہ چلا کہ ظلم کا نشانہ بننے والی بچی کے گاﺅں سے تعلق رکھنے والا ایک 38 سالہ شخص اسے سوتے ہوئے والد کے پہلو سے اٹھالے گیا تھا۔ اس درندہ صفت شخص نے بچی کو جھاڑیوں میں لیجاکر اپنی ہوس کا نشانہ بنایا اور اسے مردہ سمجھ کر وہیں پھینک کر فرار ہوگیا۔

شیطان صفت شخص بچی کے والدین کے ساتھ مل کر اسے ڈھوندنے کا ڈرامہ بھی کرتا رہا، لیکن تفتیش کے دوران اس نے اعتراف کرلیا کہ یہ ظلم اسی نے کیا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور اس کے خلاف قانونی کارروائی جاری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس