ہینڈی کرافٹ سیکٹر کو سپورٹ کرنے سے بھاری زرمبادلہ حاصل ہوسکتا ہے

ہینڈی کرافٹ سیکٹر کو سپورٹ کرنے سے بھاری زرمبادلہ حاصل ہوسکتا ہے

لاہور (کامرس رپورٹر)اگر حکومت پاکستان کے ہینڈی کرافٹ سیکٹر کو سپورٹ کرے تو یہ بھاری زرمبادلہ ملک میں لانے کی بھرپور اہلیت رکھتا ہے، ان خیالات کا اظہار لاہور چیمبر کے نائب صدر ناصر سعید نے لاہور چیمبر میں ہینڈی کرافٹ کنونشن اور نمائش کا افتتاح کرتے ہوئے کیا۔ سٹینڈنگ کمیٹی برائے ہینڈی کرافٹ کی کنوینر ناصرہ تسکین، سابق نائب صدر سید محمود غزنوی، تنویر احمد، عدنان خالد بٹ اور سلمان باسط کے علاوہ مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی ایک بڑی تعداد اس موقع پر موجود تھی۔ تمام شرکاء نے نمائش میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا اور نمائش کے لیے رکھی جانے والی مصنوعات کے معیار کو سراہا۔ ناصر سعید نے کہا کہ لاہور چیمبر نمائشوں کے ذریعے اْن تمام شعبوں کی خوبیوں کو اْجاگر کررہا ہے جو ملک کی معاشی ترقی کے لیے غیرمعمولی کردار ادا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تجارتی میلے اور نمائشیں نہ صرف غیرملکی سرمایہ کاروں کو راغب کرتی ہیں بلکہ عالمی سطح پر ملک کی ساکھ بھی اْجاگر کرتی ہیں۔ انہوں نے جرمنی اور چین کی مثال دی جہاں ہر سال سینکڑوں تجارتی میلے اور نمائشیں منعقد ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جرمنی میں سالانہ ایک ہزار سے زائد تجارتی میلے اور نمائشیں منعقد ہوتی ہیں جنہوں نے اس کے معاشی استحکام میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

لہذا ہمیں بھی اس جانب توجہ دینا ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ نجی شعبے کا نمائشوں کی جانب راغب ہونابہت اچھا شگون ہے۔ لاہور چیمبر کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے ہینڈی کرافٹ کی کنوینر ناصرہ تسکین نے کہا کہ اْن مسائل پر ترجیحاًقابو پانے کی ضرورت ہے جن کی وجہ سے ہینڈی کرافٹ سیکٹر کی گروتھ متاثر ہورہی ہے۔

مزید : کامرس