قومی مالیاتی کمیشن ایوارڈ کی تشکیل کیلئے ورکنگ گروپس کا دو روزہ اجلاس

قومی مالیاتی کمیشن ایوارڈ کی تشکیل کیلئے ورکنگ گروپس کا دو روزہ اجلاس

لاہور (کامرس رپورٹر) آٹھویں قومی مالیاتی کمیشن ایوارڈ کی تشکیل کے لئے ورکنگ گروپس کا دو روزہ اجلاس لاہور میں ہوا۔ اجلاس میں چاروں صوبوں کے وزراء خزانہ اور ورکنگ گروپس کے دیگر ارکان نے بھی شرکت کی۔ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ جن کے پاس خزانہ کا قلمدان بھی ہے نے اجلاس میں شرکت کی۔ ورکنگ گروپس کے اجلاس میںآٹھویں قومی مالیاتی ایوارڈ کے لئے صوبوں کے حصے کے فارمولہ پراتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشش کی گئی۔ اجلاس کی سفارشات اکتوبر میں پیش کی جائیں گی۔ وفاقی حکومت کی جانب سے این ایف سی ایوارڈ کے لئے چار ورکنگ گروپ تشکیل دئیے تھے۔ لاہور میں ہونے والے اجلاس کے دوران ان ورکنگ گروپس کی سفارشات پیش کی گئیں۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں صوبوں کی جانب سے ایک دوسرے کی رپورٹس پر اعتراضات بھی پیش کیے گئے جبکہ اجلاس میں بلوچستان کی جانب سے پسماندگی کی بنیاد پر صوبے کا حصہ بڑھانے کا مطالبہ کیا گیا جبکہ خیبر پختونخوا کی جانب سے دہشت گردی کے سبب سب سے زیادہ متاثر ہونے کی بنیاد پر قومی مالیاتی ایوارڈ میں شیئر میں اضافے کا خواہاں ہے۔ سندھ کی جانب سے موقف پیش کیا گیا کہ صو بہ سب سے زیادہ ریونیو جمع کرتا ہے لہٰذا ریونیو کی بنیاد پر صوبے کے حصے کا تعین کیا جائے جبکہ پنجاب کی جانب سے آبادی اور پسماندگی کے دیرینہ موقف پر صوبے کے حصے کے تعین کے مطالبے کا آعادہ کیا گیا۔قومی مالیاتی کمیشن کے ورکنگ گروپس کا اجلاس آج بھی جاری رہے گا اور ان اجلاسوں میں کی رپورٹس اکتوبر میں متوقع این ایف سی کے آئندہ اجلاس میں پیش کی جائیں گی۔

مزید : صفحہ اول