غلط علاج اور تشخیص‘ 2سینئر ڈاکٹروں کو ہرجانہ ادائیگی درخواست پر جج کنزیومر کورٹ میں پیش ہونے کیلئے نوٹس جاری کرنیکا حکم

غلط علاج اور تشخیص‘ 2سینئر ڈاکٹروں کو ہرجانہ ادائیگی درخواست پر جج کنزیومر ...

ملتان(خبر نگار خصو صی) جج کنزیومرکورٹ ملتان نے غلط علاج اور تشخیص پر (بقیہ نمبر30صفحہ5پر )

2 سینئرڈاکٹروں کے خلاف ہرجانہ ادا کرنے کی درخواست پر 21 ستمبر کو پیش ہونے کے لئے نوٹس جا ری کرنے کا حکم دیا ہے۔فاضل عدالت میں ملکی بنک کے ریجنل ہیڈ ملتان محمد عمران نے درخواست دائر کی تھی کہ اس نے سینے میں تکلیف کے باعث اسسٹنٹ پروفیسرامراض سینہ کارڈیالوجی ہسپتال ڈاکٹر انجم نوید جمال کو چیک کرایا جنہوں نے اس کو ٹی بی کی تشخیص کی بعد ازاں ریفر کرنے پر سابق پروفیسر آف میڈیسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر اعجاز ملک کو چیک کرایا جنہوں نے اس کے ضروری ٹسٹ کرائے بغیر 8 ماہ تک ٹی بی کا علاج کیا اور غلط علاج کے باعث وہ پھیپھڑ وں کے کینسر وں میں مبتلاہوگیا ہے اور اب تک علاج پر 20 لاکھ روپے خرچ کرچکاہے اور اس غفلت پر مذکورہ ڈاکٹروں کو ہرجانہ ادا کرنے کا نوٹس بھجوایاگیا لیکن دادرسی نہ ہونے پر مقدمہ دائر کیاگیا ہے اس لئے علاج اور قانونی کارروائی کیاخراجات وہرجانہ کی مدمیں اس کو 60 لاکھ روپے کی رقم اداکرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر