میٹرو بس ڈرائیورز کی عملی تربیت کا آغاز، سٹاف کی بھرتی کا عمل جاری

میٹرو بس ڈرائیورز کی عملی تربیت کا آغاز، سٹاف کی بھرتی کا عمل جاری

ملتان (نمائندہ خصوصی )ملتان میٹرو بس سسٹم کے تحت چلنے والی میٹرو بسوں کے ڈرائیوروں کی عملی تربیت کا آغاز کردیاگیا ہے اور میٹرو بسوں کو ڈرائیو کرنے کی پریکٹس شروع کردی گئی ہے ۔یہ تربیت بس ڈپو کمپلیکس کے اندر موجود ٹریک پر دی جارہی ہیں جس کے لئے ماہر انسٹرکٹر کی خدمات(بقیہ نمبر31صفحہ5پر )

حاصل کی گئی ہیں ۔ملتان میٹرو بس روٹ پر بسیں چلانے کا کنٹریکٹ حاصل کرنے والی ڈائیووکمپنی کی طرف سے ڈائیورز اور دیگر سٹاف کی بھرتی کا عمل جاری ہے ۔سلیکٹ ہونے والے ڈرائیورز کے لئے پہلے تھیوری کی کلاسز کا اجراء کیا جاتا ہے اور وہاں سے ٹیسٹ میں پاس ہونے والوں کو عملی تربیت دی جارہی ہے ۔میٹرو بس فلائی اوور کے ایکس پنشن جوائنٹس لگانے کے بعد میٹرو روٹ پر بسیں چلانے کی پریکٹس شروع کی جائے گی ۔ملتان میٹرو بس سسٹم پر چلنے والی بسیں انتہائی جدت کی حامل ہیں۔ ملتان کے گرم موسم کو مدنظر رکھتے ہوئے بسوں کا ائر کنڈیشنڈ سسٹم اَپ گریڈ کیا گیا ہے ۔ پسنجر کے لئے بسوں میں تین آٹو میٹک ڈور لگائے گئے ہیں جن پر سنسر نصب ہیں اور جب بس میٹرو بس اسٹیشن کے پلیٹ فارم پر اسٹیشن کے گیٹ کے سامنے رکے گی تو بس اور اسٹیشن دونوں کے گیٹ بیک وقت کھل جائیں گے ۔ ہر بس اسٹیشن میں بھی پسنجر کیلئے تین گیٹ لگائے گئے ہیں اس کے علاوہ بس میں مرد اور خواتین کے لئے علیحدہ علیحدہ پورشن بنائے گئے ہیں ۔بس کے سسٹم میں میٹرو بس روٹ کوفیڈ کردیا جائے گااور بس جب ایک اسٹیشن سے دوسرے اسٹیشن کی طرف روانہ ہوگی تو پسنجر کی اطلاع کے لئے خود بخود آنے والے بس اسٹیشن کے نام کا اعلان ہو جائے گا۔ہر میٹرو بس کی لمبائی 18میٹر ہے جس میں 44سیٹیں لگائی گئی ہیں لیکن اس میں 150سے زائد پسنجر کے سفر کرنے کی گنجائش موجود ہے ۔دلچسپ بات یہ ہے کہ بس ڈپو کے بہاؤ الدین زکریا یونیورسٹی سے متصل ہونے کی وجہ سے سہ پہر کے اوقات میں روزانہ سینکڑوں سٹوڈنٹس میٹرو بسوں کا نظارہ کرنے کیلئے کچھے چلے آتے ہیں ۔ان طلباء و طالبات میں میٹرو بس سسٹم شروع ہونے کے بارے میں بڑا اشتیاق پایا جاتا ہے اور ان کی خواہش ہے کہ میٹرو بس سسٹم جلد شروع ہو تاکہ انہیں ائر کنڈیشنڈ بسوں میں سفر کرنے کی سہولت میسر آنے کے ساتھ ساتھ یونیورسٹی کی بسوں کے اوقات کی قید سے بھی آزادی مل سکے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر