جمہوریت کا دفاع قوم کی اولین ترجیح رہی ہے، بلاول بھٹو زرداری

جمہوریت کا دفاع قوم کی اولین ترجیح رہی ہے، بلاول بھٹو زرداری

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ہماری جغرافیہ، نظریے اور جمہوریت کا دفاع قوم کی اولین ترجیح رہی ہے اور تمام پاکستانیوں کو اپنے دفاع کو مضبوط کرنے اور اس کو ہر قسم کے اندرونی اور بیرونی دشمنوں کے لیے ناقابل تسخیر بنانے کے عزم کا اعادہ کرنا چاہیے،کل پورے ملک میں دفاع کا قومی دن منائے جانے کے حوالے سے اپنے پیغام میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ یہ وقت ہے کہ ہم اپنی مسلح فورسز کو سلام پیش کریں جو کہ بلا خوف ہماری جغرافیائی سرحدوں کا دفاع کر رہی ہیں اور دہشتگردی کے خلاف جنگ میں اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر رہی ہیں،انہوں نے کہا کہ انتہاپسندی اور دہشتگردی بھی ملک کے لیے اتنا ہی بڑا خطرہ ہیں جتنا کہ ہمارے نظریے کے مخالفین دشمن،پیپلزپارٹی کے چیئرمین نے واضح کیا کہ پوری پاکستانی قوم سخت محنت، وفاداری اور کامل یقینی سے اپنے دفاع کو مضبوط کرنے کے لیے دن رات کام کر رہی ہے،ایک قوم اور اس کے سپاہی ایک دوسرے کے لیے باعث فخر ہیں کہ ان کے پاس ملک کے دفاع اور اس کے لیے بھرپور جوش و جذبے سے لڑنے پر کسی سمجھوتے کی کوئی گنجائش نہیں ہے،بلاول بھٹو زرداری نے یاد دلایا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں عام شہریوں سے لے کر مسلح فورسز تک 50ہزار پاکستانیوں نے اپنی جان کا نذرانہ دیا ہے اور قوم نے80بلین ڈالرزکا معاشی نقصان بھگتا ہے،انہوں نے کہا کہ متعصب ڈکٹیٹروں اور ان کے چوزوں نے ملک کو تاریخ میں ایک قبر کی مانند صورتحال تک لے پہنچایا ہے، ضرورت اس بات کی ہے کہ ماضی کو تاریخ کا حصہ بناکر ایک نئی صبح کو آگے لانا چاہیے جہاں ایک روشن، پرامن، جمہوری اور مساوی پاکستان کے لیے ہمارے ویژن متعلق کسی بھی الجھن کی گنجائش نہیں،بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ سابق وزراء اعظم شہید ذوالفقار علی بھٹو اور شہید محترمہ بینظیر بھٹو نے ایٹمی پروگرام کے آغاز اور میزائل پروگرام پر تحقیق اور ترقی کے بنا پر اپنی جانیں قربان کیں،آج ایٹمی توازن اور موثر میزائل رینج نظام نے ہمارے دفاع کو ناقابل تسخیر بنایا ہے، بلاول بھٹو زرداری نے مسلح فورسز کے شہید سپاہیوں کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی قوم قربانیوں کی وجہ سے ان کو اپنا ہیرو تسلیم کرتی ہے، انہوں نے کہا کہ ہم شہید سپاہیوں کے خاندانوں کے ساتھ یکجہتی میں ہمیشہ کھڑے رہیں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر