ایم سی تھری چارسدہ میں گندگی کے ڈھیر ، وبائی امراض پھیلنے کا خدشہ

ایم سی تھری چارسدہ میں گندگی کے ڈھیر ، وبائی امراض پھیلنے کا خدشہ

چارسدہ (بیورورپورٹ) ایم سی تھری چارسدہ میں گندگی کے ڈھیر ۔ وبائی امراض پھیلنے کا خدشہ ۔ 17کروڑ وپے کی لاگت سے تعمیرشدہ نکاس آب کا نالہ بااثر افراد آبپاشی کیلئے استعمال کرنے لگے ۔ عید الضحیٰ سے پہلے ٹی ایم اے نے جنگی بنیادوں پر کاروائی نہ کی تو موزی امراض پھیلنے کا قوی امکا ن ہے ۔ وحید درانی ۔ تفصیلا ت کے مطابق اے این پی کے رہنماء وحید درانی نے میڈیاسے بات چیت کر تے ہوئے کہا کہ ٹی ایم اے چارسدہ کی چشم پوشی کی وجہ سے شہری علاقہ ایم سی تھری گندگی اور غلاظت کا ڈھیر بن گیا ہے جبکہ 17کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر شدہ نکاس آب کے نالے پر بااثر افراد نے پانی کے موٹر نصب کرکے آبپاشی کیلئے استعمال کر رہے ہیں۔ ہر طر ف گندگی اور غلاظت کی وجہ سے بدبو اور تعفن پھیلی ہوئی ہے جس کی وجہ سے وبائی امراض پھیلنے کا خدشہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عید الضحیٰ سے پہلے پہلے علاقے میں جنگی بنیادوں پر صفائی نہ کی گئی تو علاقے میں موزی اور وبائی اامراض پھیلنے کے یقینی خدشات موجود ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر