طالبان سے امن مذاکرات، پاکستان کی جانب سے مدد کی امید نہیں: افغانستان

طالبان سے امن مذاکرات، پاکستان کی جانب سے مدد کی امید نہیں: افغانستان
طالبان سے امن مذاکرات، پاکستان کی جانب سے مدد کی امید نہیں: افغانستان

  

کابل (آئی این پی) افغان قومی سلامتی کے مشیر محمد حنیف اتمر نے کہا ہے کہ پاکستان کی جانب سے طالبان کے ساتھ امن مذاکرات میں پاکستان کی مدد کی کوئی امید نہیں۔

افغان میڈیا کے مطابق ایک انٹرویو میں حنیف اتمر نے کہاکہ پاکستان کی جانب سے سفارتی تعلقات کے طور پر پیغامات موصول ہوئے ہیں ہمارے صدر نے انہیں بتایا کہ ہمیں امن مذاکرات میں آپ کی جانب سے مدد کی کوئی امید نہیں۔ ہم نے پاکستان سے کہا کہ وہ وعدہ کریں کہ جو امن مذاکرات سے انکارکریں گے وہ انکے خلاف کارروائی کرے گا لیکن پاکستان نے ایسا نہیں کیا، ہم سے جھوٹ بولا۔

دہشتگردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی دیانت داری پر سوال اٹھاتے ہوئے حنیف اتمر نے کہا کہ اسلام آباد نے کہا تھاکہ طالبان رہنما پاکستان میں نہیں لیکن اس کے بعد ہم نے دیکھا کہ ملا اختر منصور پاکستان کے اندر سفر کرتے ہوئے مارا گیا، ا سکے پاس پاکستان کا شناختی کارڈ بھی تھا۔ہم نے پاکستان سے واضح طور پر کہا ہے کہ آپ جھوٹ کیوں بول رہے ہو؟ یہ امن عمل آپ کے حق میں نہیں ہوگا، دہشتگردی کا آپ پر الٹا اثر ہوگا، ایسا پہلے سے ہی ہورہا ہے، امید ہے پاکستان اس مسئلے پر سوچ بچار کرے گا۔

مزید : بین الاقوامی