محمد علی جناح یونیورسٹی کے سابق صدر ڈاکٹر عبدالوہاب انتقال کر گئے،آئی بی اے کے ڈائریکٹر بھی رہے

محمد علی جناح یونیورسٹی کے سابق صدر ڈاکٹر عبدالوہاب انتقال کر گئے،آئی بی اے ...
محمد علی جناح یونیورسٹی کے سابق صدر ڈاکٹر عبدالوہاب انتقال کر گئے،آئی بی اے کے ڈائریکٹر بھی رہے

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) معروف ماہر تعلیم ڈاکٹر عبدالوہاب کینسر سے لڑتے لڑتے زندگی کی بازی ہار گئے ہیں۔ پیر کے روز طبیعت زیادہ خراب ہونے پر انہیں نجی ہسپتال لے جایا گیا جہاں انہیں وینٹی لیٹر پر رکھا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکے۔ مرحوم نے سوگواران میں 3 بیٹے، ایک بیٹی اور ایک بیوہ چھوڑی ہے۔

اپنے طویل تعلیمی کیریئر کے دوران ڈاکٹر عبدالوہاب کراچی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ، انسٹیٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن (آئی بی اے) کے ڈائریکٹر اور محمد علی جناح یونیورسٹی کے صدر بھی رہے۔ انہوں نے اپنی کتاب ”سرکاری اداروں کی اصلاح“ میں اپنے کیرئیر کے دو واقعات بھی قلمبند کئے جو بعد ازاں بہت مقبول ہوئے۔

پہلے واقعے میں انہوں نے بتایا کہ میرٹ پر پورا نہ اترنے پر انہوں نے اپنے ہی بیٹے کو آئی بی اے میں داخلہ نہ دیا۔ انہوں نے لکھا کہ ”میں اس رات بہت رویا کیونکہ میں نے اپنے ہی بیٹے کا داخلہ مسترد کر دیا تھا۔ اس نے میرٹ سے تھوڑے کم نمبر حاصل کئے تھے لیکن اصولوں پر کبھی سمجھوتہ نہیں کرنا چاہئے۔“

دوسرے واقعے سے متعلق انہوں نے لکھا کہ ”ایک بار مجھے صدر جنرل ضیاءالحق کی جانب سے ایک خط ملا جس میں انہوں نے بہاولپور کے ایک لڑکے کو بغیر کسی پابندی کے داخلہ دینے کو کہا۔ میں اس لڑکے سے ملا جس دوران وہ مجھے ایک کمزور طالب علم محسوس ہوا۔ میں نے قیاس کیا کہ آئی بی اے میں زیادہ دیر ٹھہر نہیں پائے گا اس لئے میں نے انتظامیہ سے کہا کہ اسے ہوسٹل میں رہنے کی اجازت دیدی جائے تاہم اسے داخلہ نہ دیا جائے۔ کچھ دنوں بعد وہ لڑکا میرے پاس آیا اور مجھے بتایا کہ وہ جا رہا ہے۔ وہ آئی بی اے میں پڑھائے جانے والے نصاب کو سمجھ نہیں پایا تھا۔“

مزید : کراچی