چھ ستمبریوم عزم اورفتح کا دن ہے،دشمن نے دوبارہ ناپاک جسارت کی تو ماضی سے بڑی شکست ہو گی :سینیٹر سراج الحق

چھ ستمبریوم عزم اورفتح کا دن ہے،دشمن نے دوبارہ ناپاک جسارت کی تو ماضی سے بڑی ...
چھ ستمبریوم عزم اورفتح کا دن ہے،دشمن نے دوبارہ ناپاک جسارت کی تو ماضی سے بڑی شکست ہو گی :سینیٹر سراج الحق

  

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ چھ ستمبریوم عزم اوریوم فتح کا دن ہے ،اس دن پاک فوج اور قوم نے آگے بڑھ کر دشمن کا مقابلہ کیا اور اپنے سے بڑے دشمن کو شکست دی،شہداء کی قربانیوں پر ہمیں فخر ہے،اب بھی دشمن کو وہی پیغام دیتے ہیں کہ اگر اس طرح دوبارہ ناپاک جسارت کی تو ماضی سے بڑی شکست ہو گی،میر قاسم علی نے اہل پاکستان کو پیغام دیا کہ پاکستان کے نظریئے کی حفاظت ضروری ہے،مطیع الرحمان نظامی کی پھانسی پر ترکی نے سفیر واپس بلایا اور تعلقات ختم کئے لیکن اسلام آباد قبرستان کی طرح خاموش ہے،حکمرانوں کی خاموشی تاریخی بزدلی کا ثبوت ہے۔

دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام اسلام آباد کے مقامی ہوٹل میں’’ دفاع پاکستان سیمینار‘‘ سے خطاب کرتے ہوئیسینیٹر سراج الحق نے کہاکہ آج کا پاکستان ایٹمی طاقت ہے،اسکی صلاحیت میں اضافہ ہوا ہے، پاکستان جغرافیہ کا نام نہیں،ایک نظریہ کا نام ہے،اس مقدس سرزمین کی خاطر زندگی قربان کرنا بہت بڑی سعادت ہے، پاکستان ایک ایسی عمارت ہے جس کی تعمیر میں لاکھوں لوگوں کا خون شامل ہے۔انہوں نے کہا کہ چند دن قبل مودی نے بلوچستان اور گلگت بلتستان کے حوالہ سے جن عزائم کا اظہار کیا یہ اس بات کی علامت ہے کہ دشمن نے آج بھی پاکستان کو تسلیم نہیں کیا،چاروں طرف سے انڈیا نے پاکستان کا محاصرہ کیا ہے،حالات کا تقاضا ہے کہ اختلافات کو ایک طرف رکھ کر چیلنج کا مقابلہ کریں،وزیر داخلہ سے لے کر وزیر اعظم تک نے مودی سے اسوقت ملاقات کی جب مودی نے پاکستان کو توڑنے کا اعتراف کیا تھا، پاکستان عالمی عدالت میں جا کر مودی کے اعتراف پر کیس داخل کرے۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ میر قاسم علی نے اہل پاکستان کو پیغام دیا کہ پاکستان کے نظریئے کی حفاظت ضروری ہے،مطیع الرحمان نظامی کی پھانسی پر ترکی نے سفیر واپس بلایا اور تعلقات ختم کئے لیکن اسلام آباد قبرستان کی طرح خاموش ہے،حکمرانوں کی خاموشی تاریخی بزدلی کا ثبوت ہے۔انہوں نے کہا کہ میں مختلف ممالک کے سفیروں سے ملا اور کہا کہ بنگلہ دیش میں سیاسی لوگوں کا قتل عام کیوں ہو رہا ہے ،سب نے کہا کہ ہم ساتھ دینے کے لئے تیار ہیں ،اگر پاکستان آگے بڑھے۔بنگلہ دیش بین الاقوامی معاہدے کی خلاف ورزی کر رہا ہے،چوبیس ہزار لوگ جیلوں میں ہیں،آٹھ ستمبر کو اسلام آباد میں وزیر اعظم سیکرٹریٹ کے سامنے دھرنا دیں گے۔ سیمینار سے دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق،پروفیسر حافظ محمد سعید،سردار عتیق احمد،غلام محمد صفی،مولانا شاہ اویس احمد نورانی،مولانا فضل الرحمان خلیل،حافظ عبدالرحمان مکی،مولانا یوسف شاہ،مفتی سعید طیب بھٹویسمیت دیگر نے بھی خطاب کیا ۔

مزید : قومی