سعودی مفتی اعظم نے ایرانیوں کیخلاف اب تک کا سب سے خوفناک فتویٰ دیدیا

سعودی مفتی اعظم نے ایرانیوں کیخلاف اب تک کا سب سے خوفناک فتویٰ دیدیا
سعودی مفتی اعظم نے ایرانیوں کیخلاف اب تک کا سب سے خوفناک فتویٰ دیدیا

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک)ایرانی سپریم لیڈر نے گزشتہ بیان میں سعودی حکومت کو حج انتظامات کے حوالے سے شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا جس کے بعد آج سعودی مفتی اعظم نے ایرانیوں کو غیر مسلم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں اب سمجھ جانا چاہیے کہ ایرانی مسلمان نہیں ہیں ۔

مزیدپڑھیں:سعودی عرب کے بغیر یہ کام کبھی نہیں ہوسکتا، روسی صدر پیوٹن نے ایسا زور دار اعلان کردیا کہ سعودی بادشاہ کو خوشی سے نہال کردیا

تفصیلات کے مطابق سعودی مفتی اعظم کا یہ بیان ایرانی سپریم لیڈر کے اس بیان کے رد عمل میں ہے جس میں انہو ںنے کہا تھا کہ مسلمان ممالک کو سعودی حج اتنظامات کے حوالے سے سوچنا چاہیے ۔ایرانی سپریم لیڈر نے گزشتہ سال میں کرین گرنے کے باعث ہونے والی اموات کی ذمہ داری سعودی حکومت پر ڈالتے ہوئے کہا تھا کہ ان تمام اموات کا زمہ دار سعودی عرب ہے ۔سعودی عرب کا کہناہے کہ ایران اور سعودی وعرب میں معاہدہ نہ ہونے کی وجہ سے ایران کو اجازت نہیں مل سکی ہے ۔مفتی اعظم کا کہناتھا کہ پوری دنیا حج انتظامات کے حوالے سے سعوی عرب پر بھروسہ کرتی ہے اور سعودی عرب انتظامات کو مزید بہتر بنانے کیلئے کوشاں ہے ۔

مزید : عرب دنیا