پاکستان ورکرز فیڈریشن کا انسپکشن نظام کے خاتمہ پر تشویش کا اظہار

پاکستان ورکرز فیڈریشن کا انسپکشن نظام کے خاتمہ پر تشویش کا اظہار

پشاور (سٹی رپورٹر) پاکستان ورکرز فیڈریشن نے خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے کارخانوں میں لیبر انسپکشن نظام کے خاتمے کیلئے مبینہ کوششوں پر تشویش کا اظہار کیا ہے جبکہ اس نظام کے خاتمے کی صورت میں صوبہ گیر احتجاجی تحریک چلانے کا بھی اعلان کیا ہے۔ پی ڈبلیو ایف کے صوبائی جنرل سیکرٹری رازم خان نے اس حوالے سے ایک بیان میں بتایا کہ صوبائی حکومت نے کارخانوں میں لیبر انسپکشن نظام کے خاتمے کیلئے مبینہ طور پر کوششیں شروع کر دی ہیں اور اگر یہ اقدام اٹھایا گیا تو لاکھوں مزدور ماہانہ مقرر اجرت، ای او بی آئی، ورکرز ویلفیئر بورڈ اور ای ایس ایس آئی کے تحت ملنے والے حقوق سے محروم ہوجائینگے جو نہ صرف انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے بلکہ آئی ایل او کنونشن کی نفی ہے جس سے عالمی سطح پر ملک کے ساکھ پر بھی برے اثرات مرتب ہونگے۔ ان کا کہنا تھا کہ لیبر انسپکشن ہونے کے باجود اکثر مزدوروں کو حق نہیں مل رہا اور اگر یہ نظام ختم کردیا گیا تو تمام مزدور ان کے حقوق سے محروم رہ جائینگے اورکارخانہ داروں کو بھی نقصان کا سامنا ہوگا اسلئے حکومت لیبر انسپکشن نظام خاتمے کی کوششوں سے باز آجائے ورنہ پاکستان ورکرز فیڈریشن صوبہ گیر احتجاجی تحریک چلائیگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...