سرکاری افسروں و ملازمین کے تبادلوں پر پابندی کے باوجود عمل درآمد نہ ہونے کے خلاف دائر درخواست ناقابل سماعت قرار

سرکاری افسروں و ملازمین کے تبادلوں پر پابندی کے باوجود عمل درآمد نہ ہونے کے ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس شمس محمود مرزا نے وزیراعلیٰ پنجاب کی جانب سے صوبہ بھر میں سرکاری افسروں و ملازمین کے تبادلوں پر پابندی کے باوجود عمل درآمد نہ ہونے کے خلاف دائر درخواست ناقابل سماعت قرار دے کرمسترد کردی۔عدالت میں شہری محمد ذیشان شوکت کی طرف سے دائر درخواست میں میں وزیر اعلیٰ، چیف سیکرٹری سمیت دیگر کو فریق بنایاگیاتھا، درخواست گزارکے وکیل کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا تھاکہ وزیراعلیٰ پنجاب نے 25 اگست 2019 ء کو صوبے بھرمیں تبادلوں پر پابندی عائد کی۔وزیراعلیٰ کے احکامات پرمکمل عمل درآمد نہیں ہو رہا۔

،ڈپٹی کمشنر نارووال نے27 اگست کوفیصل ندیم،شہزاد انور سمیت دیگر ریونیو افسروں کے تبادلے کردیئے۔ عدالت سے استدعاہے کہ وزیراعلیٰ کے تبادلوں پرپابندی بارے احکامات پرعمل درآمداور ریونیو افسروں کے تبادلے منسوخ کرنے کا حکم دیا جائے،عدالت نے درخواست ناقابل سماعت قراردیتے ہوئے مستردکر دی اور قرار دیا کہ تقرر تبادلوں کا معاملہ حکومتی پالیسی کاحصہ ہے،عدالت اس میں مداخلت نہیں کرسکتی۔

مزید : علاقائی


loading...