سندھ احتساب عدالتوں کے ججز اعلٰی عدالتوں نے لگائے ، حکومت پر عتماد کرے : پیپلز پارٹی 

    سندھ احتساب عدالتوں کے ججز اعلٰی عدالتوں نے لگائے ، حکومت پر عتماد کرے : ...

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی وزیر اطلاعات و لیبر سعید غنی نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کیخلاف طے شدہ منصوبے کے تحت انتقامی کارروائیاںکی جارہی ہے،فریال تالپور کو ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جا رہا ہے ،تاکہ آصف زرداری اور بلاول بھٹو کو دبا ﺅمیں لایا جاسکے،پیپلز پارٹی کو میڈیا سینئر ججزکے حق اور آئین کی پاسداری کی آواز بلند کرنے کی سزا دی جارہی ہے، پیپلز پارٹی نے سودے بازی کرنی ہوتی تو ذولفقار علی بھٹو اور بی بی شہید زندہ ہوتیں اور آصف زرداری جیل میں نہ ہوتے ، پہلے ذوالفقار علی بھٹو اور پھر بے نظیر بھٹو کی میت سندھ بھیجی گئیں، خدانخواستہ آصف زرداری کے خلاف اس طرح کی سازش نہ کی جائے، 70 سال کی تاریخ میں پہلی بار کیس دوسرے صوبے میں چلایا جا رہا ہے، سندھ کی احتساب عدالتوں میں ججز ہم نے نہیں اعلی عدالتوں نے لگائے ، اگر ان ججز پر بھی اعتبار نہیں تو پھر ان عدالتوں کو تالے لگادیئے جائیں، وزیر اعلیٰ کے پی کے، اسد قیصر ،پرویز خٹک اور علیمہ باجی کے خلاف ٹرائل سندھ میں کیا جائے۔وہ نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے، اس موقع پر صوبائی وزراءامتیاز شیخ ،ناصر سیال، ناصر شاہ ودیگر وزرا ء اور صوبائی اسمبلی کے ارکان بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ،پیپلز پارٹی کے رہنماوں پر جو الزامات ان کا تعلق سندھ سے ہے جبکہ ان کا ٹرائل اسلام آباد اور پنجاب میں کیا جا رہا ہے اور اس کے اسباب یہ بتائے جا رہے ہیں سندھ میں پیپلز پارٹی کی حکومت ہے اور سندھ حکومت ان فیصلوں پر اثر انداز ہو گی، اگر انہی اسباب کو تسلیم کر لیا جائے تو ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ پی ٹی آئی کی حکومت کے جن اراکین پر نیب کے الزامات ہیں ان کا ٹرائل سندھ میں کرایا جائے ، سندھ میں ٹرائل کا نہ ہونا ججوں پر عدم اعتماد ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے موجودہ صدر اورسابق صدر پاکستان اور موجودہ رکن قومی اسمبلی کے ساتھ وہ نارواسلوک کیا جا رہا ہے، جو افراد پیپلز پارٹی کو چھوڑ کر پی ٹی آئی میں شامل ہو گئے ان کے خلاف مقدمات بھی ختم ہو گئے، لیکن ہم کسی دبا میں نہیں آئیں گے۔ 

سعید غنی

مزید : صفحہ آخر


loading...