شکر ہے 300ارب روپے کی  ڈکیتی رُک گئی، خورشید شاہ

 شکر ہے 300ارب روپے کی  ڈکیتی رُک گئی، خورشید شاہ

اسلام آباد (این این آئی) پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماءسید خورشید احمد شاہ نے جی آئی ڈی سی کے 300ارب روپے خرچ کرنے کا فارمولا تجویز کرتے ہوئے کہا ہے کہ عوام سے اکٹھے کئے گئے پیسے عوام پر ہی لگائے جائیں، 300 ارب این ایف سی کے تحت صوبوں کو دیئے جائیں ،صوبے رقم کو صحت اور تعلیم کے شعبوں پر خرچ کریں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنماءسید خورشید احمد شاہ نے کہا کہ شکر ہے گیس ڈویلپمنٹ انفراسٹرکچر کے 300 ارب روپے کی ڈکیتی رک گئی۔ انہوں نے کہا کہ معاملہ سامنے آتے ہی کہا عمران حکومت اپنوں کےلئے حاتم طائی نہ بنے۔انہوں نے کہا کہ یہ 300 ارب بجلی، گیس مہنگی کر کے پاک ایران گیس پائپ لائن کےلئے عوام سے اکٹھے کیئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ریاست کے عوام کی امانت آپ کچھ لوگوں کو بخش نہیں سکتے۔ انہوں نے کہا کہ سیدھا سادہ فارمولا ہے، عوام سے اکٹھے کیئے پیسے واپس عوام پر ہی لگائے جائیں۔انہوں نے کہا کہ جی آئی ڈی سی کے 300 ارب روپے این ایف سی کے تحت صوبوں کو دیئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ صوبے اس رقم کو صحت اور تعلیم کے شعبوں پر خرچ کریں،اس طرح عوام کی امانت واپس عوام تک پہنچ جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا آرڈیننس سے لاعلمی ظاہر کرنا اپنی نااہلی تسلیم کرنا ہے۔ آرڈیننس وزیراعظم کی ایڈوائس پر صدر جاری کرتا ہے،وزیراعظم تسلیم کرےں اس کا گورننس پر کنٹرول نہیں۔

خورشید شاہ

مزید : صفحہ آخر


loading...