ٹھٹہ واٹر سپلائی ریفرنس، آصف زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 19ستمبر تک توسیع

    ٹھٹہ واٹر سپلائی ریفرنس، آصف زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ ...

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق صدر آصف علی زر داری اور فریال تالپور کے خلاف منی لانڈرنگ اور پارک لین ریفرنسز پر سماعت بغیر کارروائی کے ملتوی کر دی۔ جمعرات کو سابق صدر آصف علی زرداری اور فریال تالپور کو ڈیوٹی جج کے روبرو پیش کر دیا گیا،ڈیوٹی جج احتساب عدالت راجہ جواد عباس نے سماعت 19 ستمبر تک ملتوی کر دی۔جج نے ریمارکس دیئے کہ متعلقہ جج ریفرنسز کو سن رہے ہیں، وہی سماعت کرینگے۔عدالت نے حاضری لگا کر آصف علی زرداری اور فریال تالپور کو واپس بھیجنے کا حکم دیدیا۔ جج نے کہاکہ درخواستیں میں سن لیتا ہوں لیکن مین کیس متعلقہ جج ہی سنیں گے۔ عدالت نے ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس پر سماعت 19 ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے سابق صدر آصف علی زرداری اور فریال تالپور کے جوڈیشل ریمانڈ میں 19 ستمبر تک توسیع کر دی۔دوسری جانب آصف علی زرداری کو جیل میں اے سی کی سہولت نہ دینے کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی، آصف زرداری نے روسٹرم پر آکر کہا پہلے گرفتار ہوا تھا تو جیل میں سہولتیں دی گئی تھیں عدالتی حکم کے باوجود اے سی اور فریج کی سہولت نہیں دی گئی، کمرہ عدالت سے نکلتے ہوئے آصف زرداری نے سیکورٹی گارڈ کو چھڑی سے پیچھے دھکیلتے ہوئے کہا کہ دیکھتے نہیں ہو میری بہن پیچھے ہے۔احتساب عدالت نے آصف علی زرداری کو سہولتیں دینے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔قبل ازیں آصف زرداری کی صاحبزادی آصفہ بھٹو زرداری بھی احتساب عدالت پہنچیں،ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا، سعید غنی، نفیسہ شاہ اور دیگر رہنما بھی احتساب عدالت میں موجود تھے۔ اس موقع پر سابق صدر آصف زرداری سے پارٹی رہنماؤں نے ملاقاتیں بھی کیں۔

 زرداری، فریال تالپور 

مزید : صفحہ اول


loading...