بھارت میں کسی کو بھی دہشت گرد قرار  دینے کا اختیار مودی سرکار کو منتقل

   بھارت میں کسی کو بھی دہشت گرد قرار  دینے کا اختیار مودی سرکار کو منتقل

نئی دہلی(آئی این پی)بھارت نے اپنے نئے قوانین میں جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر اور جماعت الدعو کے سربراہ حافظ سعید کو دہشت گرد قرار دے دیا۔ بھارت کی وزارت داخلہ نے دونوں شخصیات کے نام غیر قانونی سرگرمیوں کی روک تھام کے ترمیمی ایکٹ میں شامل کیے ہیں۔بھارت کے نئے قانون کے مطابق حکومت کو یہ اختیار حاصل ہوگا کہ وہ دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث افراد، اس کی تیاری کرنے یا پھر اس کے فروغ کے لیے کام کرنے والوں کو دہشت گرد قرار دے سکے۔دہشت گرد قرار دینے کے بعد ان افراد کے اثاثوں اور بینک اکاؤنٹس کو منجمد کیا جاسکتا ہے۔ امریکا کے اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ میں انچارج امور جنوبی ایشیا ایلس ویلز نے مولانا مسعود اظہر، حافظ سعید، ذاکر الرحمن لکھوی اور داؤد ابراہیم کو دہشت گرد قرار دینے کے لیے بھارت کے قانونی اقدام کے استعمال کی تعریف کی۔سماجی روابط کی ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ ہم اس فیصلے میں بھارت کے ساتھ ہیں، اس اقدام کے بعد دہشت گردی کے خلاف امریکا اور بھارت کی مشترکہ کوششوں کے امکانات پیدا ہوگئے ہیں۔

دہشتگرد قرار

مزید : صفحہ اول


loading...