6 ستمبر 1965پاکستان میں شجاعت کا سنہری باب ہے‘شیخ احسن رشید 

6 ستمبر 1965پاکستان میں شجاعت کا سنہری باب ہے‘شیخ احسن رشید 

ملتان (فورم رپورٹر)حفیظ گھی اینڈ جنرل ملز (شمع بناسپتی اور وز واش کے چیف ایگزیکٹو شیخ احسن رشید نے کہا ہے کہ ہمیں فخر ہے کہ آج پوری قوم یوم دفاع پاکستان کے ساتھ ساتھ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کا دن منا رہی ہے ہم پاک فوج کی قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہیں اور اس عزم کا اعادہ کرتے ہیں کہ ہم مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام کی آزادی اور بھارتی تسلط سے نجات کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے 6ستمبر یوم دفاع کے موقع پر(بقیہ نمبر42صفحہ7پر)

 اپنے خصوصی پیغام میں کیا شیخ احسن رشید نے کہا کہ آج ہر زبان پر کشمیر بنے گا پاکستان کا نعرہ ہے اور یہی نعرہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھارتی تسلط سے نجات دلائے گا انہوں نے کہا کہ 6ستمبر 1965ء  پاکستان میں شجاعت وایثار کا سنہری باب ہے جسے ہمیشہ یاد رکھا جائے گا 1965ء  میں جب بھارت نے پاکستان پر جنگ مسلط کی تو پوری قوم یک زبان اور یک دل ہو گئی اس جارحیت کی حدت کو پاکستان میں بسنے والے ہر شہری نے محسوس کیا اور اس پر ردعمل کا اظہار کیا 65ء  کی جنگ کے چند روز دنیا کی جنگی تاریخ میں بھی ایک مثال ہے جب پاکستانی قوم نے کمال جرات اور بہادری کا مظاہرہ کیا پاکستان کی افواج بری، بحری اور فضائی دستے میدان جنگ میں اترے اور دشمن کے دانت کھٹے کردیئے چند دن کی اس جنگ میں بھارت کو احساس ہو گیا کہ اس نے کس قوم کو للکارا ہے پاکستانی افواج نے تینوں شعبوں میں ایسے ایسے معرکے سر کئے کہ دنیا ان جنگی کارناموں پر حیران رہ گئی پوری قوم بھی اس موقع پر پاک فوج کا دست و بازو بن گئی اور جذبے کا یہ عالم تھا کہ ہر شہری اپنے گھر میں بیٹھے ہوئے بھی خود کو یہ جنگ لڑتا ہوا محسوس کررہا تھا بھارت کو اس جنگ میں کئی محاذوں پر شکست کا سامنا کرنا پڑا اور اسے بھاری نقصان ہوا اس جنگ نے ملک میں بکھرے ہو ئے لوگوں کو پھر ایک قوم کی صورت میں اکٹھا کردیا اور ثابت ہوا کہ قوم مشکل اور ابتلا ء  کے دور میں اکٹھے ہو جاتی ہے اور ایک پلیٹ فارم پر اکٹھے ہو کر دشمن کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بن جاتی ہے آج بھی یہ قوم متحد ہے اور دشمن کے لئے سیسہ پلائی دیوار ہے جب بھی ملک پر کوئی مشکل وقت آیا تو پھر یہ قوم 65کی یاد کو تازہ کرے گی 6ستمبر کو اب ہماری قوم یوم دفاع کے طور پر مناتی ہے اس دن کا مقصد ان لمحات کو یاد کرتا ہے جب دشمن کے ناپاک ارادوں کے خلاف پاکستانی قوم نے اسے جواباللکارا اور اس عہد کی تجدید کرنا ہے جو 50برس قبل پاکستانی قوم نے کی کہ جب بھی پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے دیکھنے کی کوشش کی گئی تو پوری قوم اس طرح جواب دے گی جس طرح 1965میں پوری قوم نے دیا یہ دن ہمیں ان شہیدوں کی یاد دلاتا ہے جنہوں نے 65کی جنگ میں وطن کے دفاع کے لئے اپنی جانیں قربان کردیں لیکن اپنے ملک پر آنچ نہیں آنے دی قربانیاں دینے والے ان جوانوں کی یاد دلاتا ہے جنہوں نے اپنی آسائش، گھر بار کی رونق ترک کرکے میدان جنگ میں داد شجاعت دیا اور پھر جام شہادت نوش کیا یہ دن ہمیشہ یاد رہے گا اور دشمن کو بھی یاد رہے گا آخر اس کا واسطہ کس قوم سے پڑا تھا اس اہم دن کے موقع پر جہاں پوری قوم اس اہم اور قومی واقعہ کو پورے جذبے کے ساتھ مناتی ہے وہاں اپنی افواج کو بھی خراج تحسین پیش کرتی ہے کہ وہ دنیا بھر میں ایک پروفیشنل اور طاقتور فوج مانی جاتی ہے جس کے اندر دشمنوں کو ناکوں چنے چبوانے کی صلاحیت اور ہمت ہے اور حوصلہ بھی ہے آج کے دن ہم بحثیت پاکستانی قوم یہ عہد کرتے ہیں کہ ہم کبھی اپنے ملک پر ذرہ برابر آنچ نہیں آنے دیں گے اور اپنے ملک کو آگے لے جانے میں اہم کردار ادا کریں گے اور مظلوم کشمیریوں کی آزادی کے لئے بھرپور انداز میں اپنا کردار ادا کریں گے میں 6ستمبر کے موقع پر پوری قوم کی یکجہتی کو سلام پیش کرتا ہوں۔

احسن رشید 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...