پاکستان اومان باہمی اقتصادی وتجارتی تعلقات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ پر متفق 

پاکستان اومان باہمی اقتصادی وتجارتی تعلقات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کے ...

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ)وزیراعظم عمران خان سے سلطنت اومان کی پارلیمنٹ کے وفدنے ملاقات کی جس میں دو طرفہ تجارتی تعلقات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا گیا، سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر بھی اس موقع پر موجود تھے۔ایوان وزیراعظم میں عمان کے پارلیمانی وفد نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی، اس موقع پر پاکستان اوراومان کے درمیان دوطرفہ تجارتی تعلقات کے فروغ کے عزم کا اظہار کیا گیا۔ وزیراعظم نے اومانی وفد کو کشمیریوں پر ڈھائے جانیوالے مظالم سے آگاہ کیااور کہا غاصب بھارتی فورسز معصوم کشمیر یوں کو بدترین مظالم کا نشانہ بنا رہی ہیں،اومانی وفد نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کیا۔ وزیر اعظم عمران خان سے اومان کے پا ر لیمانی وفد نے ملاقات کی جس میں عمران خان نے وفد کو مقبوضہ کشمیر میں جا ری بھارتی مظالم،انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے تفصیلی آ گا ہ کیا۔جمعرات کے روز اومانی مجلس شوریٰ کے چیئرمین شیخ خالد بن حلال کی قیادت میں وفد نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں وفد کو کشمیر میں جاری بھارتی مظالم،انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے متعلق آگاہ کیا گیا، ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان تجارت اور مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ کی ضرورت پر زور دیا گیا،بعد ازاں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے اوامان کے پارلیمانی وفد نے ملاقات کی جس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مقبوضہ کشمیر کی تشویشناک صورتحال سے آگاہ کیا۔جمعرات کے روز اومانی مجلس شوریٰ کے چیئرمین شیخ خالد بن حلال کی سربراہی میں وفد نے وزارت خارجہ میں شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی جس میں دوطرفہ تعلقا ت،مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور دیگر ا مو ر پر تبادلہ خیال کیا گیا، دونوں ملکوں کے فریقین نے اقتصادی اور تجارتی تعاون کے فروغ اور پاک اومان جغرافیائی قربت کے پیش نظر تعا و ن کے فروغ پر اتفاق کیا،شاہ محمود قریشی نے اومانی وفد کو کشمیر کی تشویشناک صورتحال سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے کہا گزشتہ 31دنوں سے نہتے کشمیریوں کو بدترین کرفیو کا سامنا ہے، بھارتی فورسز نے معصوم بچوں،خواتین اور بیمار بزرگوں کو یرغمال بنا رکھا ہے جو خطے کے امن کیلئے انتہائی خطرناک ہے،خونریز کرفیو کے باعث مقبوضہ وادی میں خوراک اور ادویات کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے جس سے نہتے مسلمانوں کی نسل کشی کا خدشہ ہے،اومانی وفد نے کہا پاکستان وسط ایشیائی ممالک تک رسائی کیلئے گیٹ وے کی حیثیت رکھتا ہے۔

پاک اومان اتفاق

مزید : صفحہ اول


loading...