بھارتی اور افغان ایجنٹ عمر دائود خٹک کی گرفتاری کی تفصیلات سامنے آگئیں

بھارتی اور افغان ایجنٹ عمر دائود خٹک کی گرفتاری کی تفصیلات سامنے آگئیں
بھارتی اور افغان ایجنٹ عمر دائود خٹک کی گرفتاری کی تفصیلات سامنے آگئیں

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک) وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) حکام کا کہنا ہے کہ عمردائود کو ایف آئی اے اہلکاروں نے طورخم بارڈر پر روکا، عمردائود افغان پاسپورٹ پر افغانستان جارہا تھا اس نے خود کو افغانی باشندہ ظاہر کیا۔ایف آئی اے حکام کے مطابق بھارتی ایجنٹ پاکستانی لہجے میں پشتو بول رہا تھا، دوران تفتیش ایجنٹ نے بتایا کہ اس کا پاکستانی شناختی کارڈ بھی ہے۔آن لائن سسٹم پر شناختی کارڈ نمبر چیک کرنے پر عمر دائود کا نام ای سی ایل میں ہونے کا انکشاف ہوا، دوہری شہریت ہونے پر بھارتی اور افغانی ایجنٹ عمر دائود کو گرفتار کیا گیا۔ایف آئی اے کے مطابق عمردائود خٹک جامعہ پشاور میں اکائونٹس کا طالب علم تھا، وہ 2013 میں تعلیم ادھوری چھوڑ کر افغانستان منتقل ہوا اور 2013 سے 2019 تک افغانستان میں مقیم رہا۔ایف آئی اے حکام کے مطابق عمردائود خٹک افغان انٹیلی جنس ایجنسی (این ڈی ایس) کیلئے کام کررہا تھا، این ڈی ایس کے ساتھ کام کرنے کے دوران عمردائود کے بھارتی خفیہ ایجنسی 'را' سے تعلقات قائم ہوئے، 'را' اہلکاروں کے ساتھ عمر دائود دبئی گیا جہاں اس کی پاکستان مخالف تربیت ہوئی۔خیال رہے کہ وفاقی تحقیقاتی ادارے(ایف آئی اے) نے 22 اگست کو طورخم سے ضلع کرک کے رہائشی عمر دائود نامی افغان ایجنٹ کو گرفتار کیا تھا جس نے غیر قانونی طریقے سے افغانی شہریت لے رکھی ہے اور افغان پاسپورٹ پر وہ 5 بار بھارت جاچکا ہے۔افغان اور بھارتی ایجنسیز کے ایجنٹ عمر دائود کا کیس محکمہ انسداد دہشت گردی کو کو سپرد کردیا گیا ہے جس سے تحقیقات میں پتا چلایا جائے گا کہ عمر دائود 5 بار بھارت کیوں گیا؟ اس کے کتنے اثاثے ہیں؟ ملک بھر میں کتنے بینک اکاو¿نٹس ہیں؟؟

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...