اس سے پہلے کہ کوئی مجھے بھی حراست میں لیکرگولی مار دے ، اس نظام کو بدل دیں ، ارشاد بھٹی کی عمران خان سے اپیل

اس سے پہلے کہ کوئی مجھے بھی حراست میں لیکرگولی مار دے ، اس نظام کو بدل دیں ، ...
اس سے پہلے کہ کوئی مجھے بھی حراست میں لیکرگولی مار دے ، اس نظام کو بدل دیں ، ارشاد بھٹی کی عمران خان سے اپیل

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے کہا ہے کہ پولیس ساروں کیلئے ظالم نہیں ، صرف غریبوں کیلئے ظالم ہے، اب تین قتل مزید ریاست مدینہ کے والی کے سر پر منڈلارہے ہیں،عمران خان کوچاہئے کہ اس سے پہلے کوئی مجھے بھی حراست میں لیکرگولی ماردے اس نظام کو بدل دیں۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے ارشاد بھٹی نے کہا کہ آرمی چیف کی جی ایچ کیو میں کی گئی تقریر کی اہم بات یہ تھی کہ آرمی چیف نے دنیا سے ایک بار پھر کہا کہ کشمیر کی صورتحال پر توجہ دے کیونکہ اب صبر کا پیمانہ لبریز ہورہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری آزاد ہیں ، ان کو کون شکست دے سکتاہے ؟ کشمیر کی آزادی کا بس اعلان ہونا ہی باقی ہے ۔

ارشادبھٹی کا کہناتھا کہ پچھلے 25سالوں میں یہ دیکھتا آرہا ہوں کہ پولیس کی حراست میں لوگ قتل ہوتے ہیں ، تھوڑا بہت شور ہوتا اور پھر وہی کچھ ہوتاہے ۔ پولیس ساروں کیلئے ظالم نہیں ہے یہ صرف غریبوں کیلئے ظالم ہے ، یہ بڑوں کی خدمتگار اور جوتے اٹھانے والی ہے اور غریبوں کیلئے ظالم ہے ، یہی صرف کہانی ہے ۔ہم72سالوں سے یہی کچھ بھگت رہے ہیں ۔ تین قتل اب مزید ریاست مدینہ کے والی کے سر پر منڈلارہے ہیں۔عمران خان کوچاہئے کہ اس سے پہلے کوئی مجھے بھی حراست میں لیکرگولی ماردے اس نظام کو بدل دیں۔

مزید : قومی


loading...