پاکستان کو بیرونی قرضوں سے آزاد کراناچاہتے ہیں،شاہد جاوید

 پاکستان کو بیرونی قرضوں سے آزاد کراناچاہتے ہیں،شاہد جاوید

  

   لاہور(پ ر)بیرون ملک مقیم پاکستانی پاکستان کے مسائل سے بہت پریشان ہیں۔ ہماری معیشت قرضوں کی زد میں ہے اس تحریک نے پاکستان کو قرضوں سے آزاد کروانے کا بیڑہ اُٹھایا ہے ان خیالات کا اظہار آئی ایم پاکستان کے سینئر نائب صدر  شاہد جاوید  نے پریس کانفرنس سے خطاک کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ قرض سے پاک پاکستان کا منصوبہ گذشتہ سال ستمبر میں شروع کیا گیا۔

۔ اوریہ منصوبہ تیارکیا گیا ہے کہ پاکستان کوقرضوں سے آزاد کروانے کے لئے بیرون ملک مقیم پاکستانی یہاں سرمایہ کاری کریں گے۔ پہلے مرحلے میں وہ پاکستانی رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں اپنی سرمایہ کاری کریں گے۔ مقصد یہ ہے کہ ملک کے قرضوں کی ادائیگی کے لئے کافی فنڈز اکٹھا کیاجائے گا۔ یہ کہ کام تین مراحل میں مکمل کیا جائے گا اور 2023-24 کے آخر تک انشاء اللہ ہم پاکستان کے تمام قرضوں کی ادائیگی کرنے کا انتظام کرلیں گے۔ IAPWWM کا دوسرا مقصد پاکستان کو درپیش پانی کے مسائل اور بھاشا اور مہمند ڈیم کی تعمیر کی اہم ضرورت کے متعلق عالمی سطح پر آگاہی دینا ہے۔ بیرون ملک مقیم پاکستانی بھی ان ڈیمز اور دیگر ڈیموں کی تعمیر کے لئے فراخدلی سے عطیہ دے رہے ہیں۔ ان کی تعمیر سے بارشوں کا پانی جمع کرنے میں مدد ملے گی جو کہ وہ پانی زراعت کی پیداوار کے لیے مہیا کیا جاسکتا ہے اور اس پانی سے ملک کے لئے سستی بجلی بنائی جائے گی۔ جو کہ صنعتوں کی تیاری کے اخراجات میں کافی کمی لائے گی جس سے لوگوں کا میعار زندگی بلند ہوگا۔ یہ تحریک فطری طور پر غیر سیاسی ہے اس تحریک کا پاکستا ن کی کسی بھی سیاسی پارٹی سے کوئی وابستگی نہیں ہے۔ لیکن ہم ہر اس شخص یا پارٹی کے شانہ بشانہ کھڑے ہونگے جو وطن عزیر کی فلاح و بہبود کے لئے مخلص ہونگے۔ کانفرنس سے سئنیر ایڈوائزر شفقت محمود، ایس سہیل اور ذولقرنین نے بھی خطاب لیا     

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -