فوج پر عزم اور مکمل تیار،اپنی سرزمین کا ایک انچ بھی نہیں چھوڑینگے،چین کی بھارت کو وارننگ

فوج پر عزم اور مکمل تیار،اپنی سرزمین کا ایک انچ بھی نہیں چھوڑینگے،چین کی ...

  

 ماسکو (مانیٹرنگ ڈیسک) چین نے ایک بار پھر سخت بیان میں کہاہے کہ لداخ میں سرحدی کشیدگی کا بھارت ذمہ دار ہے اور چین اپنی سرزمین کا ایک انچ بھی نہیں چھوڑے گا، چینی فوج ملکی سالمیت کے تحفظ کے لیے پر عزم ہے۔ چین کی جانب سے یہ بیان ماسکو میں چینی اور بھارتی وزیر دفاع کے درمیان ایک اہم میٹنگ کے بعد سامنے آیا ہے۔ایل اے سی پر کشیدگی کو دور کرنے کے مقصد سے ماسکو میں بھارتی وزیر دفاع راجناتھ سنگھ اور ان کے چینی ہم منصب وی فینگ کے درمیان تقریبا اڑھائی گھنٹے کی ملاقات ہوئی۔دونوں رہنما شنگھائی تعاون تنظیم کے ایک اجلاس میں شرکت کے لیے روس کے دورے پر تھے۔ ملاقات کے چند گھنٹے بعد ہی چینی حکومت کی طرف جاری بیان میں ایل اے سی پر بھارتی حرکتوں پر شدید نکتہ چینی کی گئی۔بیجنگ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیاکہ چین اور بھارت کے درمیان سرحد پر موجودہ کشیدگی کی وجوہات اور اس کی حقیقت پوری طرح سے واضح ہے، اس کے لیے بھارت پوری طرح سے ذمہ دار ہے۔ چین اپنی سرزمین کا ایک انچ بھی نہیں کھو سکتا اور اس کی مسلح افواج قومی خود مختاری اور علاقائی سالمیت کے تحفظ کے تئیں پوری طرح پرعزم، پر اعتماد اور قابل ہیں۔ چین نے کہاہے کہ بھارت صدر شی جن پنگ اور نریندر مودی کے درمیان طے پانے والے معاہدوں پر دلجمعی سے عمل کرے اور تصفیہ طلب مسائل مذکرات اور مشاورت کے ذریعے حل کرنے پر زور دیں۔ چین اور بھارت کے درمیان تعلقات کو مزید اچھا کرنے، علاقائی امن و استحکام کی مجموعی صورتحال کو بہتر بنانے اور سرحدی علاقوں میں امن و امان کی حفاظت کرنے جیسے معاملات پر فریقین کو توجہ دینے کی ضرورت ہے۔دوسری جانب بھارتی وزارت دفاع کی جانب جاری ایک بیان میں سرحد پر کشیدگی کے لیے چینی کارروائیوں کو ذمہ دار بتایا گیا ہے۔

چین وارننگ 

مزید :

صفحہ اول -