جماعت اشاعت التوحید کا توہین رسالتؐ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

    جماعت اشاعت التوحید کا توہین رسالتؐ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)جماعت اشاعت التوحید والسنتہ ضلع پشاور کے زیر اہتمام توہین رسالت کے خلاف پشاور پریس کلب میں احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان،آرمی چیف اور چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کیا کہ گستاخ صحابہ کے واقعات کا سختی سے نوٹس لیکر ملک میں فرقہ واریت کا خاتمہ کیا جائے جبکہ قومی اسمبلی سمیت صوبائی اسمبلیوں سے تحفظ بنیاد اسلام بل پاس کرایا جائے اور ختم نبوت کا قانون مزید سخت کیا جائے مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کاردز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر انکے حق میں مطالبات درج تھے اس موقع پر شرکاء کا کہنا تھا کہ ملک خداد پاکستان سے فرقہ واریت کا خاتمہ کر کے گستاخ صحابہ کو فلفور گرفتار کیا جائے اور عبرت کا نشانہ بنایا جائے انہوں نے  مطالبہ کیا کہ محرم الحرام کے جلوسوں میں صحابہ کرام ؓ کے شان میں گستاخی کرنیوالوں کو فلفور گرفتار کیا جائے جبکہ گستاخ صحابہ کو سزائے موت یا عمر قید کی سزا دی جائے،غازی فیصل خالد کو فوری رہا کرنے سمیت نجی چینل پر برائے راست گستاخانہ بیان نشر کرنے پر  چینل کا  لاسئسنس منسوخ کیا جائے  اور ختم نبوت کا قانون مزید سخت کیا جائے بصورت دیگر احتجاج کا دائرہ کا وسیع کرینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -