واقعہ سخت ہے اور جان عزیز

واقعہ سخت ہے اور جان عزیز
واقعہ سخت ہے اور جان عزیز

  

کیوں کر اس بت سے رکھوں جان عزیز!

کیا نہیں ہے مجھے ایمان عزیز!

دل سے نکلا، پہ نہ نکلا دل سے

ہے ترے تیر کا پیکان عزیز

تاب لاتے ہی بنے گی غالبؔ

واقعہ سخت ہے اور جان عزیز

Kiun Kar Uss But Say rakhun Jaan Aziz

Kaya nahen hay Mujhay Emaan Aziz

Dil Say Nila Pa Na Nikla Dil Say

Hay Tiray Teer Ka Paikaan Aziz

Taab Laaey Hi banay Gi GHALIB

Waaqia Sakht Hay Aor Jaan Aziz

Poet: Mirza Ghalib

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -