اوورسیز پاکستانیز کے حقوق کے تحفظ کے لیے ہم سب ایک پلیٹ فارم پر ہیں، طارق جاوید

اوورسیز پاکستانیز کے حقوق کے تحفظ کے لیے ہم سب ایک پلیٹ فارم پر ہیں، طارق ...
اوورسیز پاکستانیز کے حقوق کے تحفظ کے لیے ہم سب ایک پلیٹ فارم پر ہیں، طارق جاوید

  

دبئی (طاہر منیر طاہر) بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے مسائل کو اجاگر کرنے اور ان کے مسائل کے حل کے لیے پاکستان اوورسیز کمیونٹی گلوبل کے نام سے ایک فلاحی تنظیم کو متحدہ عرب امارات میں متعارف کرایا گیا ہے جس کے چیئرمین میاں طارق جاوید ہیں جبکہ متحدہ عرب امارات میں متذکرہ تنظیم کے صدر ڈاکٹر محمد اکرم چودھری ہیں۔

پی او سی گلوبل کے زیر اہتمام گزشتہ روز دبئی میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں نائب صدر طارق محمود چودھری، جنرل سیکرٹری سہیل عامر گھمن، انفارمیشن سیکرٹری سید اطاعت حسین وارثی، فنانس سیکرٹری آصف علی پراچہ، دبئی کمیٹی کے صدر رانا شہزاد انیس، نائب صدر طارق رشید چودھری، جنرل سیکرٹری محمد وقاص گھمن، جوائنٹ سیکرٹری محمد بلال آصف، شارجہ کمیٹی کے صدر خالد سعید، نائب صدر محمد فرحان، عجمان کمیٹی کے صدر محمداسلام سرکانی، نائب صدر عاصم شہزاد، جنرل سیکرٹری محمد صدیق یٰسین، انفارمیشن سیکرٹری محمد یونس بزدار، راس الخیمہ کمیٹی کے صدر عابد شریف، نائب صدر محمد شکیل اختر اور پاکستانی کمیٹی دبئی کے خواجہ عبدالوحید پال، میاں منیر ہانس اور دیگر لوگوں نے شرکت کی۔ اس موق پر پی او سی کے چیئرمین میاں طارق جاوید نے یو اے ای کی ٹیم کا حلف لیا اور انہیں ان کی نئی ذمہ داریاں تفویض کیں۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے میاں طارق جاوید نے کہا کہ POC گلوبل ایک غیر سیاسی تنظیم ہے جو دنیا بھر میں موجود پاکستانیوں کے لیے فلاحی کام کرے گی اور ان کے مسائل کو اعلیٰ سطح پر اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ حل بھی کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت دنیا بھر کے 87 سے زائد ممالک میں پی او سی کے دفاتر قائم ہوچکے ہیں جو اپنا اپنا کام بہتر انداز میں کررہے ہیں۔

میاں طارق جاوید نے بتایا کہ ہمارا مقصد تمام اوورسیز پاکستانیز کو ایک پلیٹ فارم پر لانا ہے تاکہ مل جل کر عوامی فلاحی کاموں کو سرانجام دیا جاسکے اور مسائل میں کمی لائی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ پی او سی کے پلیٹ فارم پر دنیا بھر سے ہر طبقہ فکر کے لوگ جمع ہیں۔ میاں طارق جاوید نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیز کی اپنے ہی ملک میں کوئی عزت نہیں ہے ہر سال اربوں ڈالر زرمبادلہ کی صورت میں اوورسیز پاکستانیز اپنے ملک بھجواتے ہیں جس سے حکومت کی معیشت چلتی ہے لیکن اوورسیز پاکستانیز کو ایک موبائل فون بھی بغیر ٹیکس کے لیجانے کی اجازت نہیں ہے جو اوورسیز پاکستانیز کے ساتھ سراسر زیادتی اور ناانصافی ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں تمام اوورسیز پاکستانیز کی طرف سے حکومت سے مطالبہ کرتا ہوں کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو موبائل ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دیا جائے۔ میاں طارق جاوید نے کہا کہ وہ دورہ امارات کے بعد پاکستان جارہے ہیں، وہاں جاکر وہ متعلقہ حکام سے بھی اس سلسلہ میں بات کریں گے۔

مزید :

عرب دنیا -تارکین پاکستان -