کراچی میں 1100ارب کا پیکج  "بھنگ معیشت"۔۔۔۔احسن اقبال نے ایسی بات کہہ دی کہ وزیر اعظم کے غصے کی انتہا نہ رہے گی 

 کراچی میں 1100ارب کا پیکج  "بھنگ معیشت"۔۔۔۔احسن اقبال نے ایسی بات کہہ دی کہ ...
 کراچی میں 1100ارب کا پیکج 

  

نارووال(آئی این پی)  پاکستان مسلم لیگ ن کے جنرل سیکرٹری احسن اقبال نے کہا ہے   کہ پی ٹی آئی  حکومت نے پاکستان کو معاشی و سفارتی طور پر کمزور کر دیا ہے،بھارت نے وہ قدم اٹھایا جس کی 72سال جرات نہ کر سکا، موجودہ حکمرانوں نے پاکستان کے دفاع کو داو پر لگا دیا ہے، حکومت کی بدترین معاشی پالیسیوں کے وجہ سے پاکستان کی سلامتی کو خطرات لاحق ہیں مضبوط معیشت کے بغیر ملک کی مسلح افواج کے لئے تنہا دفاع کو یقینی بنانا مشکل ہو جاتا ہے، معیشت کو کھوکھلا کر کے یہ قوم کو اب بھنگ معیشت کی نوید سنا رہے ہیں، اسی بھنگ معیشت کا ایک نمونہ کراچی میں 1100ارب کا پیکج ہے۔

   تفصیلات کےمطابق پاکستان مسلم لیگ ن کےجنرل سیکرٹری احسن اقبال نےحوالدارناصرحسین شہید کی قبر پرفاتحہ خوانی کےبعدمیڈیاسےگفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم تمام شہداء   کو سلام پیش کرتے ہیں،  جہنوں نے پاکستان کی آزادی، سالمیت کے لیے اپنی جانوں کی قربانی دی، 6 ستمبر ہمیں خاص طور پر ان شہداء   کی یاد دلاتا ہے جہنوں نے کشمیر کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا، ہمارے سارے شہیدوں کی روحیں حکومت سے سوال کرتیں ہیں کشمیر کہاں ہے؟اس حکومت نے پاکستان کو معاشی و سفارتی طور پر کمزور کر دیا ہے،بھارت نے وہ قدم اٹھایا جس کی 72سال جرات نہ کر سکا، موجودہ حکمرانوں نے پاکستان کے  دفاع کو داؤ پر لگا دیا ہے، حکومت کی بدترین معاشی پالیسیوں کے وجہ سے پاکستان کی سلامتی کو خطرات لاحق ہیں۔

انہوں نے کہا اناڑی حکمرانوں نے ملک کی خارجہ پالیسی تباہ کر دی ہے، مظبوط معیشت کے بغیر ملک کی مسلح افواج کے لئے تنہا دفاع کو یقینی بنانا مشکل ہو جاتا ہے، آج قومی سلامتی کا دارومدار ٹینکوں. میزائلوں، گولوں اور جہازوں سے زیادہ معاشی طاقت پر ہوتا ہے، نااہل و ناکام حکمران آج پاکستان کے کلیدی مفادات کے لیے خطرہ بن چکے ہیں،ہم اس بوجھ کو کتنی دیر برداشت کریں گے؟میں آج کے دن عمران خان سے سوال کرتا ہوں وہ کشمیر کہاں ہے جو متنازعہ ہے؟۔

انہوں نے کہا  وہ کشمیر کہاں ہے جس کو سکیورٹی کونسل نے متنازعہ قرار دیا؟کیونکر عمران احمد نیازی کی حکومت ایک سال مسئلہ کشمیر پہ سوئی رہی،بھارت پراتنا دباو کیوں نہیں ڈالا کہ مقبوضہ کشمیر سے کرفیو ختم ہوتا؟معیشت کو کھوکھلا کر کے یہ قوم کو اب بھنگ معیشت کی نوید سنا رہے ہیں،اسی بھنگ معیشت کا ایک نمونہ کراچی میں 1100ارب کا پیکج ہے،عمران احمد نیازی صاحب آپ نے جو کراچی میں 1100ارب کا پیکج دیا ہے اس کا پیسہ کہاں ہے؟آپ نے تو  خزانہ خالی کر دیا ہے، ترقیاتی بجٹ پچاس فیصد کاٹ دیا ہے، دو سال پہلے ہم نے 9ارب روپے گرین لائن میٹر و منصوبے کو مکمل کر نے کے لیے دیا تھا آپ وہ نہیں لگا سکے،ہم نے دیامیر بھاشا ڈیم کے لیے 24ارب دیا تھا آپ وہ استعمال نہیں کر سکے، اس سال دیا میر بھاشا ڈیم کو 28ارب دینے تھے وہ بجٹ میں آپ کے پاس پیسے نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا  ذرا ہمیں یہ سمجھا دیں یہ 1100ارب روپے آپ کہاں سے نکالیں گےیا پھر کراچی پیکج بھی بھنگ معیشت کا خواب ہے، جو آپ نے کراچی والوں کو دکھایا ہے،گورنر ہاؤس کے پرفضا لان پر بیٹھ کر 1100ارب کا لالی پاپ سنایا واپس آ گئے، کراچی جہاں سے آپ دعوی کرتے ہیں، 21میں سے 14 سیٹیں حاصل کی ہیں، کیا وہ کراچی آپ کے 14 گھنٹے بھی حاصل نہیں کر سکا، افسوس ہے آپ کو پاکستان کے عوام سے کوئی ہمدردی نہیں ہے، آپ کو صرف اپنی کرسی سے اور اپوزیشن کی کردار کشی اور جھوٹے کیس بنانے سے دلچسپی ہے، ایسے نہ حکومت جلتی ہے نہ حکمرانی ہوتی ہے نہ ملک مضبوط ہوتا ہے۔

مزید :

قومی -