”اگر یونان یہ کام نہیں کرتا تو نتائج بھگتنے کے لیے تیار ہو جائے “ترک صدر نے سنگین نتائج کی دھمکی دے دی

”اگر یونان یہ کام نہیں کرتا تو نتائج بھگتنے کے لیے تیار ہو جائے “ترک صدر نے ...
”اگر یونان یہ کام نہیں کرتا تو نتائج بھگتنے کے لیے تیار ہو جائے “ترک صدر نے سنگین نتائج کی دھمکی دے دی

  

استنبول(ڈیلی پاکستان آن لائن )بحیرہ روم کے مشرقی حصے میں ترکی کی جانب سے تیل اور گیس کی تلاش کے مشن پر پیدا ہونے والے تنازع کے بعد صدر رجب طیب ایردوآن نے پڑوسی ملک یونان کو سنگین نتائج کی دھمکی دی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ یونان زیرآب قدرتی وسائل کے تنازع پر انقرہ کے ساتھ مذاکرات کرے ورنہ اسے تباہ کن جنگ کا سامنا کرنا پڑے گا۔استنبول میں طبیہ شہر کے افتتاح کے موقع پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ترک حکومت اور عوام تمام طرح کے حالات اور ان کے مرتب ہونے والے نتائج کے لیے تیار ہیں۔

خیال رہے کہ ترک صدر کی طرف سے یہ دھمکی آمیز بیان ایک ایسے وقت میں دیا گیا ہے جب دوسری طرف انقرہ نے یونان کی سرحد کی طرف ٹینک روانہ کیے ہیں۔اخبار 'ھبرلار' کی رپورٹ کے مطابق جنوبی شام کی سرحد کے قریب ہاتائی ریاست سے 40 ٹینکوں کا ایک قافلہ یونا ن کے ساتھ سرحدی علاقے کی جانب روانہ کیا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -