بھارت کا وہ گاؤں جہاں  کورونا کےاتنے زیادہ کیسز نکل آئے کہ حکومت کی دوڑیں لگ گئیں ،ریڈ زون قرار دے کر پورا علاقہ ہی سیل کردیا

بھارت کا وہ گاؤں جہاں  کورونا کےاتنے زیادہ کیسز نکل آئے کہ حکومت کی دوڑیں لگ ...
بھارت کا وہ گاؤں جہاں  کورونا کےاتنے زیادہ کیسز نکل آئے کہ حکومت کی دوڑیں لگ گئیں ،ریڈ زون قرار دے کر پورا علاقہ ہی سیل کردیا

  

حیدرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارت دنیا بھر میں کورونا کیسز میں سرفہرست ہے اور تاحال  مودی سرکارعالمی موذی مرض پر قابو پانے میں مکمل ناکام دکھائی دے رہی ہے ،ہندوستان میں روزانہ کی بنیاد پر ہزاروں مثبت کیسز سامنے آ رہے ہیں جبکہ سینکڑوں افراد کورونا کا شکار ہونے کے بعد موت کی وادی  میں جا چکے ہیں،اب بھارتی ریاست تلنگانہ کے ضلع ملگ کے وینکٹاپورم گاؤں میں ایک ہفتے کے دوران اتنے زیادہ مثبت  کیسز سامنے آئے ہیں کہ محکمہ صحت کی دوڑیں لگ گئی ہیں اور حکام نے وینکٹاپورم گاؤں کو ریڈ زون قرار دیتے ہوئے مکمل لاک ڈاؤن نافذ کردیا ہے۔

بھارتی نجی ٹی وی کے مطابق ریاست تلنگانہ کے ضلع مُلگ کے وی آر کے وینکٹاپورم گاؤں میں ایک ہفتے کے دوران  92 سے زائد افراد کورونا سے متاثر ہوگئے  ہیں جس کے بعد اس گاؤں کو ریڈ زون قرار دیتے ہوئےمکمل لاک ڈاؤن نافذ کرتے ہوئے کسی بھی شخص کے باہر جانے اور گاؤں میں داخل ہونے پر پابندی عائد کردی ہے۔کورونا سے متاثر ہونے والے کئی افراد کی حالت انتہائی تشویش ناک بیان کی جا رہی ہے جبکہ کئی مریضوں کو مقامی سرکاری ہسپتال میں داخل کردیا گیا ہے۔

وینکٹاپورم گاؤں کی ٹوٹل آبادی 853 ہے ،جن افراد میں کورونا کیسز  مثبت آئے ہیں انہوں نے گاؤں میں انتقال کرنے والے ایک شخص کی موت کے بعد اہل خانہ کی جانب سے  منعقد کی گئی تقریب میں شرکت کی تھی اور وہاں  کھانا کھایا تھا۔اس تقریب میں شامل ہونے والے قریبی گاؤں کملاپور کے رہائشی 73 افراد کے کورونا ٹیسٹ مثبت آئے ہیں 

مزید :

کورونا وائرس -