بھارتی ناظم الا موروزارت خارجہ طلب، پاکستانی شہری تبارک حسین کے ماورئے قتل پر شدید احتجاج 

  بھارتی ناظم الا موروزارت خارجہ طلب، پاکستانی شہری تبارک حسین کے ماورئے ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (آن لائن) پاکستان نے مقبوضہ جموں و کشمیر راجوڑی میں بھارتی فوجی ہسپتال میں پاکستانی شہری تبارک حسین کے ماورائے قتل پر بھارتی ناظم الامور کو وزارت خارجہ طلب کرکے شدید احتجاج ریکارڈ کرانے سمیت احتجاجی مراسلہ تھمادیا۔ ترجمان دفتر خارجہ نے جاری بیان میں کہا ہے پاکستانی شہری تبارک حسین ذہنی طور پر معذور، 21 اگست کو نو شہرہ، راجوری کے مقام پر نادانستہ سرحد پار کر گیا تھا۔ بھارتی قابض سکیورٹی فورسز نے تبارک حسین کو بے رحمی سے گولی مار کر شہید کر دیااور کہا تبارک حسین دل کا دورہ پڑنے سے جا ں بحق ہوا،تاہم پاکستان تبارک حسین کی دل کا دورہ پڑنے سے موت کے بھارتی دعوے کو یکسر مسترد کر تا ہے، بھارتی حکام کا یہ بیان بھی شرارت پر مبنی کہ تبارک حسین کو پاک فوج نے بھیجا تھا۔تبار ک کی خراب دماغی صحت کے باعث بھارتی دعوؤں کی کوئی بنیاد نہیں، ترجمان دفتر خارجہ کا کہناتھا تبارک حسین نے 2016ء میں بھی نادانستہ سرحد پار کی، 26 ماہ کی طویل قید کاٹی، پھر پاکستان واپس بھیجا گیا۔واقعے نے انڈین حراست میں دیگر پاکستانیوں کی حفاظت، سلامتی اور بہبود پر پاکستان کے سنگین خدشات کو مزید بڑھا دیا ہے۔بھار رتی حکام کے ہاتھوں پاکستانی قیدی محمد علی حسین کا بھی وحشیانہ ماورائے عدالت قتل کیا گیا، ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہندوستان تبارک علی کے ماورائے عدالت قتل کے واقعہ کی تفصیلا ت اورتبارک حسین کی موت کی وجہ کے تعین کیلئے پوسٹمارٹم رپورٹ بھی فراہم کرے۔پاکستانی قیدی کے قتل کے ذمہ داروں کا محاسبہ کرنے کیلئے شفاف تحقیقات کی جائیں۔تبارک کے اہل خانہ کی خواہش کے مطابق مرحوم کی میت جلد وطن بھیجی جائے۔
پاکستان احتجاج

مزید :

صفحہ آخر -