سیلاب،مال گاڑیاں بند،سامان کی ترسیل متاثر،بحران شروع

  سیلاب،مال گاڑیاں بند،سامان کی ترسیل متاثر،بحران شروع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
ملتان(اے پی پی)ملتان اورکراچی کے درمیان ٹرین سروس 10روزبعدبھی بحال نہ ہوسکی۔جس کے نتیجے میں نہ صرف یہ کہ مسافروں کوشدید مشکلات کاسامناہے بلکہ مال گاڑیوں کی بندش کے باعث ملتان اورکراچی کے درمیان سامان کی آمدورفت بھی بری طرح متاثرہوئی ہے اورمارکیٹوں میں مختلف اشیاکی قلت پیدا ہونے کاخد شہ ہے۔ملتان(بقیہ نمبر41صفحہ6پر)
 اورحیدرآبادکے درمیان مسافرٹرینوں کی آمدورفت پٹریاں زیرآب آنے کے باعث 26اگست کو معطل کردی گئی تھی تاہم بعدازاں مال گاڑیوں کی آمدورفت بھی روک دی گئی۔ڈویژنل کمرشل آفیسرریلوے ملتان شاہد رضانے اے پی پی سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ٹرینوں کی بحالی پانی اترنے کے بعد ہوگی۔اس کے لئے پہلے ریلوے ٹریک کامعائنہ کیاجائے گاجس کے بعد یہ فیصلہ ہوگا کہ متاثرہ علاقے میں ٹرینوں کی رفتارکیاہونی چاہیے اوراس بارے میں حتمی فیصلہ ریلوے ہیڈکوارٹرکرے گا۔انہوں نے کہاکہ ابھی اس بارے میں کچھ نہیں کہاجاسکتا کہ ٹرینوں کی آمدورفت کب بحال ہوگی۔دریں اثنامال گاڑیوں کی آمدورفت بند ہونے کے بعد مال برداری کاساراکام ٹرکوں کے ذریعے جاری ہے اورٹرک والوں نے بھی اپنے کرایوں میں غیرمعمولی اضافہ کردیاہے۔مقامی تاجر عبدالرحمن نے اے پی پی کو بتایاکہ کراچی سے ہماراسامان گزشتہ 9روز سے بک نہیں ہوسکا،جس کے باعث مارکیٹ میں مختلف اشیاکی قلت پیداہورہی ہے۔مقامی پیپرمرچنٹ شیخ ناصرظہیرکے مطابق کراچی میں کاغذکے بہت سے گودام زیرآب آنے اورٹرانسپورٹ کی کمی کے باعث ملتان کی مارکیٹ میں کاغذکی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافہ ہوگیاہے۔