ضمنی الیکشن، عوام کا سیلاب پی ڈی ایم کو بہالے جائے گا، شاہ محمود 

ضمنی الیکشن، عوام کا سیلاب پی ڈی ایم کو بہالے جائے گا، شاہ محمود 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان(نیوزرپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ عمران خان کی پذیرائی دیکھ کر پی ڈی ایم اتحاد کی وفاقی حکومت پر بوکھلاہٹ طاری ہو چکی ہے۔ حکومت چند دنوں کی مہمان ہے۔ فسطائی حکومت کا سیاسی اور قانونی انداز میں مقابلہ کررہے ہیں۔ سندھ میں بند کرپشن کی وجہ سے بہہ گئے۔  جب عوام فیصلہ کر لیتے ہیں تو عوام کے سیلاب کے سامنے سب بند بہہ جاتے ہیں۔عوام کا سیلاب پی ڈی ایم (پاکستان ڈکیت موومنٹ)کو بہا کر لے جائیگا۔ پنجاب اور کراچی کی عوام نے ضمنی انتخابات میں لٹیروں کو مسترد کیا۔ 11ستمبر کو ملتان کی غیور عوام ایک بار پھر پی ڈی ایم کے امیدوار کو شکست دیکر امپورٹڈ حکمرانوں کو مسترد کرنے کا پیغام دیں گے۔ عوام نے عمران خان اور تحریک انصاف کے حق میں فیصلہ دے دیاہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز این ا ے157 کی مختلف یونین کونسلوں بنگل والا حسینہ چوک بدھلہ سنتبنج کوہسبحان پور میں کارنر میٹنگز سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا پچھلے ماہ عوام پر بجلی بم گرائے گئے۔ عوام چیخ اٹھے اس ماہ پھر لوگوں کو بجلی کے اضافی ہوشربا بل موصول ہوئے ہیں۔ عالمی منڈی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کے باوجود ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہو گیا ہے۔ کراچی سے خیبر تک عوام سراپا احتجاج ہیں۔ پورا سندھ پانی میں ڈوب چکا ہے۔ سیلاب متاثرین کو بلاول اور زرداری کہیں نظرآئے؟ بلاول فضائی معائنہ کرنے کی بجائے لوگوں میں جائیں۔ لوگوں سے ملیں۔ انہیں انداہ ہوگا سندھ میں ان کی کتنی پذیرائی ہے۔ سندھ کی عوام پی پی کی کرپشن اور بیڈ گورننس کی وجہ سے ان سے متنفر ہوچکے ہیں۔ سندھ کے عوام مایوس اور نا امید ہوچکے ہیں۔ بلاول لوگوں میں گھولیں ملیں تو انہیں پتہ چلے گا عوام پی پی بارے کیا رائے رکھتے ہیں۔ پنجاب سے پی پی کا پہلے صفایا ہو چکاہے۔ رہی سہی کسر 17جولائی کے ضمنی انتخاب نے پوری کردی۔ میں عوام سے سوال کرتا ہوں 20 نشستوں کے ضمنی انتخاب میں آپ کو پی پی کا وجود نظر آیا؟ الیکشن کمپیئن پینا فلیکس اور بینرز سے نہیں ہوتی۔ میں مخالفین سے سوال کرتا ہوں عوام میں آپ کی کیا مقبولیت ہے؟ این اے 157 کے ضمنی انتخاب میں عوام نے تحریک انصاف کا ساتھ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حلقے کی عوام نے 2018 میں بھی پیپلز پارٹی کو شکست دی اب ضمنی انتخابات میں بھی مسترد کریں گے۔ انہوں نے کہا این اے 157 میرا گھر ہے۔ میں الیکشن کمپیئن کے سلسلے میں 157 کی یونین کونسلوں میں جاتا ہوں تو مجھے 36 سال پہلے کا منظر یاد آجاتا ہے۔ میں آج وہاں آیا ہوں جہاں سے میری سیاست کا آغاز ہوا تھا۔یہاں کی عوام نے مجھے اور میرے بیٹے کو عزت دی۔ میں نے نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں پاکستان کی بھر پور نمائندگی کی۔ مسئلہ کشمیر ہو یا فلسطین ناموس رسالت کا مسئلہ ہو یا اسلام فوبیا کے بڑھتے ہوئے روجحانات آپ کے منتخب نمائندے نے مسلم امہ کی بھر پور نمائندگی کی۔میں نے پاکستان کی مٹی سے وفا کی ہے۔ہمارا جینا مرنا اسی مٹی میں ہے۔ہم وہ نہیں جن کے پاس دو پاسپورٹ ہوں۔ہم اقتدار میں ہوتو بھی پاکستان میں اقتدار میں نہ ہوں تو بھی پاکستان میں رہنا ہے۔ہم وہ نہیں جو اقتدار ختم ہونے کے بعد بیرون ملک فرار ہو جائیں۔ ملتان کی مٹی کا بیٹا ہوں یہاں کی عوام کی خدمت فرض ہے۔ ماضی میں بھی اس حلقے کی خدمت کی اور اللہ تعالی نے موقع دیا تو حلقے کی خدمت جاری رکھیں گے۔ انہوں نے کہا آج پاکستانی قوم کا امتحان ہے۔ملک قرضوں میں ڈوب چکا۔ عام شہری قرضوں میں ڈوب چکا ہے۔آج بتائیں مہنگائی کم ہوئی ہے یا بڑھ گئی ہے۔پچھلے مہینے بجلی کا بل آیا کیا آپ پر بجلی نہیں گری۔این اے 157 کی عوام تحریک انصاف کے ساڑھے تین سالہ دور حکومت کی مہنگائی کا پی ڈی ایم کی حکومت کے 4 ما ہ کے دور کی مہنگائی کا موازنہ کریں اور 11ستمبر کو ضمیر کی آواز کے مطابق ووٹ کا استعمال کریں۔ اس موقع پر مخدوم زادہ محمد سجاد حسین قریشی۔ پیر سید امیر حیدر شاہ۔ شیخ طاہر قریشی۔ طارق آرائیں۔ شیخ نعمان۔ ملک ظہور مہے۔ اور دیگر شخصیات موجود تھے۔جلسہ میں مختلف برادریوں نے پی ٹی آئی امیدوار محترمہ مہر بانو قریشی کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا۔ انہوں نے یونین کونسل بنگل والا موضع رشیدہ این اے 157 میں چوہدری اکرم گجر نمبردار کی شمولیتی تقریب میں شرکت کی۔جس میں چوہدری اکرم گجر نمبردار نے اپنی برادری اور ساتھیوں سمیت پی ٹی آئی امیدوار محترمہ مہر بانو قریشی کی بھرپور حمایت کا اعلان کردیا۔ اس موقع پر ملک واصف مظہر ران ایم پی اے۔ ندیم شوکت۔ عظمت علی۔ احمد علی۔ جمشید علی۔ ملک عشمت کھو کھر۔ خلیل گجر۔ وقار عزیز۔ ملک ظہور مہے اور دیگر شخصیات موجود تھی#

مزید :

صفحہ اول -