سیلاب متاثرین کے ریلیف اور ریسکیو مہم میں ہم آہنگی قائم کی جائے: نسیم شاہ 

سیلاب متاثرین کے ریلیف اور ریسکیو مہم میں ہم آہنگی قائم کی جائے: نسیم شاہ 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


         کراچی (سٹاف رپورٹر)پاکستان میں آنے والے سیلاب سے ملک کا ایک تہائی حصہ تباہی اور بربادی کی نذر ہو گیا ہے۔ سیلاب سے ملک کے طول و عرض میں پھیلے کڑوڑوں افراد امداد کے منتظر ہیں جن میں لاکھوں لوگ ایسے ہیں جن تک ابھی بھی کوئی امداد نہیں پہنچ سکی ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ پاکستان میں اس وقت ریلیف اور ریسکیو کی مہم میں بظاہر کوئی ہم آہنگی نظر نہیں آرہی ہے۔ ایک موثر ریلیف کے لئے ضروری ہے کہ انفرادی کوششوں اور اجتماعی اداروں کے درمیاں مبسوط ہم آہنگی قائم کی جائے۔ حکومتی و دیگرسماجی و فلاحی اداروں کی طرح روٹری انٹرنیشنل بھی پاکستان میں سیلاب سے متاثرین کے مدد کے لئے اپنی بساط بھی کوششوں و کاوشوں میں برابر کی شریک ہے۔ ان خیالات کا اظہار روٹری کلب کراچی سٹی کے صدر نسیم شاہ ایڈوکیٹ نے گذشتہ روز بہادر آباد چار مینار پر سیلاب زدگان کی امداد کے لئے امدادی کیمپ کے قیام  پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ کہ جس وقت سیلاب کی پیشنگوئی یا وارننگ جاری کی گئی تھی اسی وقت تمام ضروری سامان ان علاقوں میں محفوظ مقامات پر باآسانی پہچایا جا سکتا تھا۔ اور جو دشواریاں سامان پہچانے میں اس وقت آرہی ہیں ان سے بچا جا سکتا تھا۔ اس موقع پر روٹری کی ڈائرکٹر اور امدادی کیمپ کی انچارج محترمہ کرن آفتاب خان نے بتا یا کہ موجودہ نا خوشگوار حالات کے پیش نظر ہم جمع شدہ امدادی سامان  پاکستان نیوی کے لاجسٹک ونگ کے تعاون سے  متعلقہ و متاثرہ جگہوں تک بہ حفاظت پہچائیں گے۔ اور میڈیسنز و ڈاکٹروں  کے  ہمراہ  روٹری کی دو تین ٹیمیں بھی شدید ضرورت کے علاقوں میں جائیں گیں  اور ضرورت مندوں کی امداد کریں گیں۔

مزید :

صفحہ آخر -