اقوام متحدہ امریکی صدر براک اوباما اور نیٹو سربراہ کا افغان الیکشن کا خیرمقدم

اقوام متحدہ امریکی صدر براک اوباما اور نیٹو سربراہ کا افغان الیکشن کا ...

 واشنگٹن(این این آئی)امریکی صدر براک اوباما اور نیٹو سربراہ نے افغان الیکشن کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ انتخابات افغانستان میں جمہوریت کے تسلسل کے لیے نہایت اہمیت کے حامل ہیں ۔ایک بیان میںامریکی صدر باراک اوباما نے کہاکہ انتخابات افغانستان میں جمہوریت کے تسلسل کےلئے نہایت اہمیت کے حامل ہیں صدر اوباما کا کہنا تھا کہ افغانستان سے امریکا اور اس کے اتحادی افواج کے انخلا کے موقع پر افغان عوام کا اپنے ملک کے مستقبل کی ذمہ داری لینا نہایت اچھا اقدم ہے،انہوں نے کہا کہ طالبان کی دھمکیوں کی پروا کیے بغیر پولنگ اسٹیشن جاکر اپنا حق رائے دہی استعمال کرنے پر لوگوں کو مبارکباد پیش کرتا ہوں، صدر اوباما نے کہا کہ افغانستان میں جمہوریت اور بین الاقوامی مدد جاری رکھنے کے لیے صدارتی انتخابات بہت اہم ہیں ۔ ادھر نیٹو سربراہ نے افغان صدارتی الیکشن کو جمہوریت کا تسلسل قرار دیا ہے نیٹو کے سیکریٹری جنرل آندرے راسموسن نے افغانستان میں ہونے والے صدارتی اور صوبائی کونسل کے انتخابات کو ایک تاریخی لمحہ قرار دیتے ہوئے افغان مرد و زن کو مبارکباد پیش کی ہے، جنھوں نے، بقول ا±ن کے، اس قدر دلچسپی لی اور کثیر تعداد میں ووٹ ڈالے۔راسموسن نے کہا کہ ہر ایک ووٹ اہم ہے اور ہر ووٹ سے جمہوریت پنپتی ہے۔

انہوںنے کہاکہ تمام افغانوں نے، چاہے وہ جوان ہوں یا عمر رسیدہ، اپنے ملک کے مستقبل کے ساتھ اپنے واضح عزم ؛ اور جمہوریت کے بنیادی اصول سے وابستگی کے ساتھ اپنے یقین کا اظہار کیا ہے۔نیٹو کے سکرٹری جنرل نے کہا کہ یہ بات بھی قابل تعریف ہے کہ یہ انتخابات شڈول کے مطابق کرائے گئے، جس میں امیدواروں، عوام اور میڈیا میں گرمجوشی پر مبنی سیاسی مباحثہ ہوا۔ا±نھوں نے کہا کہ یہ بات اہمیت کی حامل ہے کہ انتخابی دھاندلی سے متعلق سارے الزامات کا تدارک موجود اداروں کے ضابطوں کے تحت نکالا جائے۔راسموسن نے کہا کہ افغان عوام کو اپنے سلامتی افواج پر فخر کرنا چاہیئے جنھوں نے انتخابات میں امن و امان برقرار رکھنے میں قابل تعریف کردار ادا کیا۔ادھر اقوام متحدہ کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان، جان کوبیز نے افغان ووٹروں کی حق رائے دہی میں شرکت کو سراہا اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے افغان عوام کی بڑی تعداد میں انتخابات میں شمولیت کو سراہتے ہوئے کہا کہ طالبان اور دیگر انتہا پسند گروپوں کی دھمکیوں کے باوجود لوگوں کی شرکت کی قابل تعریف ہے۔ امریکہ کے وزیردفاع چک ہیگل نے کہا ہے کہ ڈالے گئے ووٹوں کی شرح یہ دنیا پر یہ ظاہر کرتی ہے کہ افغان عوام اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کرنا چاہتے ہیں۔

مزید : عالمی منظر