سر ی نواسن کے معاملے پر آسٹریلیا اور انگلینڈ خاموش

سر ی نواسن کے معاملے پر آسٹریلیا اور انگلینڈ خاموش

 سڈنی(آئی اےن پی)2014پریمیرلیگ کے معاملات میں کرپشن کے الزامات کے بعد بھارتی سپریم کورٹ نے بھارتی کرکٹ بورڈ کے صدر سری نواسن کو مستعفی ہونے پر مجبور کردیا لیکن ان کے اپنے ملک میں ان پر کیس ہے لیکن بین الاقوامی کرکٹ میں ان کے ہمنوا اس معاملے پر بالکل خاموش ہیں ۔ بگ تھری میں نہ تو انگلینڈ اور نہ ہی آسٹریلا نے کسی ردعمل کا اظہار کیا ہے

سری نواسن کو منصوبے کے مطابق آئی سی سی کے چیئرمین کا عہدہ سنبھالنا ہے ایسے میں فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن نے رنگ میں بھنگ ڈالنے کی کوشش کی ہے فیکا کے چیف ایگزیکٹو پال مارش نے کہا ہے کہ جب تک تحقیقات جاری ہیں سری نواسن کو آئی سی سی ایگزیکٹو بورڈ اجلاس میں میز کے قریب بھی نہ آنے دیا جائے اور کسی بھی صورت چیئرمین عہدہ سنھبالنے سے روکا جائے ۔ عالمی گورننگ باڈی کا اجلاس دبئی میں ہوگا جس میں بگ تھری کے منصوبے اور سری نواسن کی بطو ر چیئرمین تقرری پر غور کیا جائے گا ۔

پال مارش کا کہنا ہے کہ بھارتی سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں وہ پی سی سی آئی کے امور سے الگ کردیئے گئے ہیں .

جو الزامات ہیں اس سے ان کا اجلاس میں شرکت کرنا غیر قانونی ہوگا ۔ پال مارش نے آئی سی سی کو یاد دلایا کہ وہ دنیا بھر میں کرکٹ بورڈز اور شائقین کو بار بار یہ بتاتی ہیں کہ کرکٹ کو سب سے بڑا کرپشن سے ہے اور اس نے اس معاملے میں عدم برداشت کی پالیسی اپنا رکھی ہے ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی