سام سنگ کا جادوئی موبائل۔۔۔بہت جلد

سام سنگ کا جادوئی موبائل۔۔۔بہت جلد
سام سنگ کا جادوئی موبائل۔۔۔بہت جلد

  

سان فرانسسکو(نیوز ڈیسک) سام سنگ کے تحقیق کاروں نے دعویٰ کیا ہے کہ انھوں نے موبائل فون کو انتہائی باریک، زیادہ پائیدار  اور اِنٹرنیٹ کو سو گُنا تک زیادہ تیز کرنے کی تکنیک ایجاد کر لی ہے۔ اس جادوئی مواد کو گرافین کہا جارہا ہے۔  یہ  لوہے سے زیادہ مظبوط اور اِنتہائی باریک ہے۔ امریکن فزیکل سوسائٹی کے مطابق کاغذ سے دس لاکھ گنا پتلا ہے اور اِسے 2004میں دریافت کیا گیا تھا۔ سام سنگ نے دعویٰ کیا ہے انہوں گرافین کو الیکٹرونک ڈیوائسز میں اِستعمال کرنے کا طریقہ ایجاد کر لیا ہے۔  اور یہ سمارٹ گھڑیوں یا انٹرنیٹ بینڈز کے طور پر استعمال کیا جا سکے گا۔ سام سنگ کے مطابق یہ اِن پراڈکٹس کی تیاری میں بہت فائدہ مند ثابت ہوگاجن کی سطح کو موڑنے کی ضرورت پیش آتی ہے جیسا کہ کلائی پر پہنے جانے والی گھڑیاں یا لچکدار سکرینز والے موبائل فون۔ باتھ یونیورسٹی کے مطابق اگر گرافین کو  فونوں میں استعمال کرنے کا طریقہ ایجاد ہو جائے تو اِنٹرنیٹ کی رفتار سو گُنا تک بڑھائی جاسکتی ہے کیونکہ یہ بجلی کو زیادہ تیزی سے" کنورٹ"    کرسکتاہے۔ سام سنگ کے مطابق وہ 2015ء  تک گرافین استعمال کرنے والے فون مارکیٹ میں لا سکتا ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی