آئی پی پیز کی مشکلات ختم

آئی پی پیز کی مشکلات ختم

آپریشن ضربِ عضب شروع ہونے کے بعد اپنا گھر بار چھوڑ کر کیمپوں میں رہنے کی قربانی دینے والے شمالی وزیرستان کے قبائل کی گھروں کو واپسی شروع ہو گئی ہے، اس سے پہلے جنوبی وزیرستان سے بے گھر ہونے والے افراد واپس جا چکے ہیں اور اب شمالی وزیرستان والے گھروں کو جا رہے ہیں۔ یہ سلسلہ24اپریل تک مکمل کر لیا جائے گا اور1200خاندان واپس گھروں کو چلے جائیں گے۔ حکومت کی طرف سے ہر خاندان کو راشن کے علاوہ35ہزار روپے نقد اور کچھ گھریلو سامان بھی دیا گیا ہے، جبکہ گھروں کی تعمیر نو کے لئے چار لاکھ روپے تک دیئے جائیں گے۔ آپریشن ضربِ عضب اور اس کے بعد آپریشن خیبر اول اور دوم کی وجہ سے لاکھوں افراد نے قربانی دی اور گھر بار چھوڑ کر پردیسی ہوئے اور کیمپوں میں بڑا سخت وقت گزارا۔ اگرچہ ان کے لئے اچھے انتظامات کی بھرپور کوشش کی گئی، ان شہریوں کی اس قربانی پر ان کو زبردست خراج تحسین بھی پیش کیا گیا۔ پاک فوج نے سوات کے بعد بڑی تاخیر سے شمالی وزیرستان کو دہشت گردوں سے پاک کرنے کے لئے آپریشن شروع کیا تھا،اس میں پاک فوج کے جوانوں کو بھی شہادتوں کی صورت میں قربانیاں دینا پڑیں اور اب یہ علاقے خالی کرا لئے گئے ہیں۔حفاظتی انتظامات کے تحت فوج شمالی اور جنوبی وزیرستان میں موجود رہے گی۔جنرل راحیل شریف کی قیادت میں پاک فوج نے ثابت قدمی سے آپریشن کیا، جس میں فضائیہ نے بھی مکمل تعاون کیا، مسلح افواج اس کامیابی پر مبارکباد کی مستحق ہیں اور یہ یقین بھی کیا جا رہا ہے کہ دہشت کا مکمل خاتمہ ہو گا اور شہری زندگی پھر سے اپنی ڈگر پر لوٹ آئے گی اور خوف کے بادل چھٹ جائیں گے۔ پاکستان کی مسلح افواج مبارکباد اور تحسین کی مستحق ہیں اور یقین ہے کہ گھروں کو جانے والے بھی آباد ہوں گے اور امن سے رہیں گے۔

مزید : اداریہ