رنگ روڑ سدرن لوپ کا نیا ماڈل تیار ‘ حکومت کو 14ارب روپے کا فائدہ

رنگ روڑ سدرن لوپ کا نیا ماڈل تیار ‘ حکومت کو 14ارب روپے کا فائدہ

 لاہور(اقبال بھٹی)لاہور رنگ روڈ کے سدرن لوپ کا نیا ماڈل تیار کر لیا گیا ۔تخمینہ 27ارب سے کم ہوکر 13ارب رہ گیا جس سے حکومت پنجاب کو 14ارب روپے کا فائدہ ہو گیا۔نیا ماڈل کمشنر لاہو رکی ہدایت پر تیار کیا گیا ۔تفصیلات کیمطابق لاہور رنگ روڈ کے سدرن لوپ کا نیا ماڈل تیار کر لیا گیا ہے ۔سڑک کی لمبائی کو تیس کلومیٹر بر قرار رکھا گیا ہے۔سٹیٹ لائف ہاؤسنگ سکیم ڈیفنس فیز فائیو سے ملتان روڈ تک 30کلو میٹر لمبی سٹر ک بنانی ہے جو کہ براستہ ایڈن ہاؤسنگ سکیم فیروز پور روڈایل ڈی اے سٹی ہاؤسنگ سکیم،خیابان امین ڈیفنس روڈ فضائیہ ٹاؤن ،بحریہ ٹاؤن،این ایف سی فیز ٹو سے لیکر مراکہ ملتان روڈ تک ہے ۔پرانے پلان کیمطابق سٹرک کی چوڑائی 160میٹر تھی جس کو کم کر کے90میٹر کر دیا گیا ہے جو کہ 3سو فٹ چوڑی بنتی ہے۔پہلے پلان کیمطابق سڑک کے ساتھ خوبصوت پارک بنائے جانے تھے وہ بھی ختم کر دیئے گئے ہیں جبکہ سڑک کے دونوں اطراف سروس لائن بنانی تھی وہ بھی ختم کر دی گئی ہے جبکہ پہلے پلان میں کمرشل زون بھی تیار کرنا تھا جس پر ایل ڈی اے نے اعتراض کیا تھاکہ کمرشل شعبہ تو ہمارے پاس ہے اور ایل ڈی اے ہی پلاٹوں کی کمرشلائزیشن کرتا ہے اس لئے کمرشل زون بھی اب نہیں بنایا جا رہا اب صرف 3سو فٹ چوڑی اور 30کلو میٹر لمبی سٹرک تیار کرنی ہے جس کیوجہ سے بجٹ میں حیرت انگیز طور پر کمی واقع ہوئی ہے یہ فیز ٹو ہے اس سے پہلے فیز ون نیازی چوک سے براستہ محمود بوٹی سٹیٹ لائف ڈیفنس فیز فائیو تک 42کلومیٹر کی طویل سٹرک بنائی جا چکی ہے۔فیز ٹو کے مکمل ہونے کے بعد فیز تھری (ویسٹرن لوپ)کا کام شروع کیا جائے گا جو کہ20کلومیٹر لمبی سٹرک مراکہ ملتان روڈ سے نیازی چوک تک بنائی جائے گی اس میں کون کون سی سکیمیں یا گاؤں آتے ہیں یہ فیز تھری کے ماڈل تیار ہونے کے بعد پتا چل سکے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1