پاکستان اور سری لنکا میں تجارتی حجم ایک ارب ڈالر کرنے پر اتفاق

پاکستان اور سری لنکا میں تجارتی حجم ایک ارب ڈالر کرنے پر اتفاق

 اسلام آباد(اے این این،آ ن لا ئن ،ما نیٹرنگ ڈیسک)پاکستان اور سری لنکانے کھیلوں، جہازرانی، سیاحت،اقتصادی ترقی،انسداد منشیات اورناگہانی آفات سے نمٹنے کے شعبوں میں باہمی تعاون کوفروغ دینے سے متعلق چھ معاہدوں ومفاہمتی یاداشتوں پردستخط کئے ہیں جبکہ دونوں ملکوں نے دو طرفہ تجارتی حجم بڑھاکر سالانہ ایک ارب ڈالر تک لانے پراتفاق کیاہے۔پیرکوپاکستان کے دورے پرآئے ہوئے سری لنکاکے صدر میتھری پالا سری سینا نے وزیراعظم ہاؤس میں وزیراعظم نوازشریف سے ملاقات کی ۔دونوں رہنماؤں نے پہلے ون آن ون اورپھروفود کی سطح پربات چیت کی جس میں مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون کوفروغ دینے سمیت باہمی دلچسپی کے دیگرامورزیرغورآئے۔ وفودکی سطح پر باضابطہ بات چیت کے بعددونوں ممالک کے درمیان چھ معاہدوں اورمفاہمتی یاداشتوں پردستخط کئے گئے جن کامقصد کھیلوں، جہازرانی، سیاحت،اقتصادی ترقی،انسداد منشیات اورناگہانی آفات سے نمٹنے کے شعبوں میں باہمی تعاون کو فروغ دینا ہے۔بعدازاں سری لنکن صدرکے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ پاکستان اور سری لنکا نے مختلف شعبوں میں تعاون کے چھ معاہدوں اور مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کیساتھ باہمی تجارت کا حجم ایک ارب ڈالر تک بڑھانے پر بھی اتفاق کیا ہے ان سمجھوتوں سے دو طرفہ روابط کو مزید وسعت دینے کی راہ ہموار ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا اور پاکستان کے تعلقات نئے دور میں داخل ہو رہے ہیں تمام علاقائی اوربین الاقوامی امور پر دونوں ملکوں کا موقف ایک ہے ہم نے دوسرے شعبوں کے علاوہ دفاعی شعبہ میں بھی تعاون کرنے پر تبادلہ خیال کیا ہے جبکہ تعلقات کی مضبوطی کے لئے اعلی سطح پر وفود کے تبادلوں پر زور دیا گیا، کرکٹ دونوں ممالک کے عوام کو ایک دوسرے کے قریب لے آئی اور دونوں ممالک آئندہ چند سال میں باہمی تجارت کا حجم ایک ارب ڈالر تک لے جانے کیلئے پرعزم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تمام ہمسایہ ملکوں کیساتھ اچھے تعلقات قائم کرنا چاہتا ہے اور وہ سری لنکا کے ساتھ اپنے روابط کو فروغ دینے پر خصوصی توجہ دے رہاہے۔ اس موقع پرسری لنکن صدر نے کہا کہ ہم دونو ں ملکوں کے عوام کے فائدے کیلئے باہمی تعاون بڑھانے سمیت پاکستان کے ساتھ تجارتی حجم مزید بڑھانے کا خواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا ہمیں عوامی سطح پر روابط مزید بڑھانے اور پاکستان کے ساتھ مختلف شعبوں میں مشترکہ تحقیقی سرگرمیوں کوفروغ دینے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے پی آئی اے کو کولمبو کیلئے اپنی پروازیں بحال کرنے کی دعوت دی۔سری لنکا کے صدر نے اپنے ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے پاکستان کے تعاون پرانتہائی خوشی کا اظہار کیا۔ سری لنکن صدر نے آئی ڈی پیز کیلئے 10لاکھ ڈالر امداد کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات مستحکم بنیادوں پر قائم ہیں جنہیں عوام کی سطح پر مزید بہتر بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دوستانہ تعلقات مستحکم کرنے کے نواز شریف کے عزم کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، تعلیم، کھیل، قدرتی آفات اور دیگر شعبوں میں باہمی تعاون کیلئے پرعزم ہیں۔ انہوں نے وزیراعظم نوازشریف کو سری لنکا کے دورے کی دعوت بھی دی۔ بعدمیں وزیراعظم نے سری لنکا کے صدر کے اعزاز میں ظہرانہ دیا۔قبل ازیں جب سری لنکن صدر وزیر اعظم ہاؤس پہنچے تو نواز شریف نے ان کا استقبال کیا اس موقع پر سری لنکا کے صدر کو گارڈ آف آنر دیا گیا ۔

مزید : صفحہ اول