باجوڑ ایجنسی ، گرلز سکول کے قریب بم دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار شہید

باجوڑ ایجنسی ، گرلز سکول کے قریب بم دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار شہید

جمرود(اے این این) باجوڑ ایجنسی میں لڑکیوں سرکاری سکول کے قریب بم دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار شہید ہو گیا،لیویز فورس کے صوبیدار سلطان بخت ہائی سکول میں ڈیوٹی پرجا رہے تھے راستے میں نصب بم کی زد میں آ گئے،مزید کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔ تفصیلاے کے مطابق پیر کی صبح باجوڑ ایجنسی کے علاقے بادان ماموند میں لڑکیوں کے ہائی سکول کے قریب ہونے والے بم دھماکے میں ایک سکیورٹی اہلکار شہید ہو گیا ہے۔پولیٹیکل انتظامیہ نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ لیویز فورس کے ایک صوبیدار سلطان بخت لڑکوں کے ہائی سکول میں ڈیوٹی دینے جا رہے تھے کہ راستے میں نصب بم پھٹ گیا اور وہ شہید ہوگئے۔دھماکے میں مزید کسی کے زخمی ہونے یا سکول کو نقصان پہنچنے کی اطلاع موصول نہیں ہوئی۔ واقعہ سکول سے 50گز کے فاصلے پر پیش آیا۔یاد رہے کہ سرکاری اعدادوشمار کے مطابق فاٹا میں اب تک 500 سے زائد سکول تباہ ہو چکے ہیں جن کی تعمیر نو کا سلسلہ بھی جاری ہے۔سکیورٹی فورز کی جانب سے قبائلی علاقے خیبر انجنسی میں بھی فوجی آپریشن جاری ہے۔ گذشتہ روز قبائلی علاقے اورکزئی ایجنسی میں سکیورٹی فورسز پر ہونے والے ایک حملے میں کم سے کم تین اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوگئے تھے۔ پاکستان میں دولتِ اسلامیہ کے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے بی بی سی کو کسی نامعلوم مقام سے فون کر کے اس حملے کی ذمہ داری اپنی تنظیم کی جانب سے قبول کر لی ہے۔یہ پہلی مرتبہ ہے کہ دولت اسلامیہ کی طرف سے پاکستان میں سکیورٹی فورسز پر ہونے والے کسی حملے کی ذمہ داری قبول کی گئی ہے۔

مزید : صفحہ اول