زہر آلود اشیا ء بیچنے والوں کی جگہ جیل ہے قانون میں ترامیم کا جائزہ لیا جائے ،شہباز شریف

زہر آلود اشیا ء بیچنے والوں کی جگہ جیل ہے قانون میں ترامیم کا جائزہ لیا جائے ...

 لاہور(پ ر) وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ویڈیو لنک کے ذریعے سول سیکرٹریٹ میں اجلاس سے خطاب کیا،جس میں پنجاب بھر میں ملاوٹ کے خلاف بھرپور مہم چلانے کے حوالے سے تجاویز پر غور کیا گیا۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہعام آدمی کو معیاری اور حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق اشیائے خور د و نوش کی فراہمی ریاست کی ذمہ داری ہے اور پنجاب حکومت اپنی یہ ذمہ داری بطریق احسن نبھائے گی۔ انہوں نے کہاکہ اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ کرنے والے انسانیت کے دشمن ہیں اور اشیاء خوردونوش میں ملاوٹ کرنے اور غیر معیاری اشیاء فروخت کرنیوالے کسی رعایت کے مستحق نہیں۔اجلاس کے دوران ملاوٹ شدہ اشیاء فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ کیاگیا ہے ۔وزیراعلیٰ نے اس ضمن میں متعلقہ محکموں اور اداروں کوملاوٹ کے خلاف جامع اور موثر ایکشن پلان مرتب کرنے کی ہدایت کی اورکہا کہ عوام کو زہر آلود اشیاء بیچنے والوں کی جگہ جیل ہے، اس ضمن میں موجودہ قانون میں ضروری ترامیم کا جائزہ لیا جائے اور جامع پلان مرتب کرکے اس پر موثر عملدرآمد کے حوالے سے بھی سسٹم وضع کیا جائے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی، ڈویژن، ضلعی اور تحصیل کی سطح پر عملدرآمد کے حوالے سے جامع میکانزم مرتب ہونا چاہیئے۔ صوبائی وزراء بلال یاسین، چوہدری محمد شفیق، مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق، ایم پی اے ڈاکٹر نادیہ عزیز، چیف سیکرٹری، متعلقہ سیکرٹریز اور اعلیٰ حکام نے ویڈیو لنک کے ذریعے سول سیکرٹریٹ سے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ محمدشہبازشریف نے پنجاب بھر میں شادی کی تقریبات کے مقررکردہ اوقات اورون ڈش پر پابندی کے قانون پر سختی سے عملدرآمد کرانے کی ہدایت کی ہے ۔صوبائی ، ڈویژنل اورضلعی انتظامیہ قانون پر عملدر آمد ہر صورت یقینی بنائیں۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ مقررکردہ اوقات اورون ڈش پرپابندی کی خلاف ورزی پر بلاامتیاز قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے ۔ شادی کی تقریبات کے مقررکردہ اوقات اورون ڈش پر پابندی کے قانون کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کروں گا۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدارت یہاں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا۔جس میں باب پاکستان کے منصوبے کا جائزہ لیا گیا۔وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے خصوصی طورپر اجلاس میں شرکت کی۔سیکرٹری اطلاعات مومن آغانے باب پاکستان کے منصوبے کے حوالے سے بریفنگ دی۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ باب پاکستان کا منصوبہ بڑی اہمیت کا حامل ہے۔باب پاکستان تحریک پاکستان کیلئے قربانیاں دینے والے ہمارے آباؤ اجداد کی یاد میں تعمیر کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئی نسل کو تحریک پاکستان اور قیام پاکستان کے اغراض و مقاصد سے روشناس کرانا قومی ذمہ داری ہے۔باب پاکستان کا منصوبہ قیام پاکستان کیلئے دی گئی قربانیوں کو اجاگر کرنے میں معاون و مددگار ثابت ہوگا۔باب پاکستان فاؤنڈیشن تشکیل دے کر بورڈز کے ممبران کو تعینات کر دیا گیا ہے۔تاریخی نوعیت کے اس منصوبے کی تکمیل کیلئے فوری اقدامات اٹھانے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ باب پاکستان کے منصوبے میں گراؤنڈزاور کھیلوں کی سہولتیں فراہم کرنے کا جائزہ لیا جائے۔تحریک قیام پاکستان کے حوالے سے تصاویر اور آرٹسٹوں کو پروموٹ کرنے کے حوالے سے بھی پلان بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ دیگر تفریحی سہولتوں کی فراہمی کے حوالے سے بھی اقدامات کیے جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ کروڑوں مسلمانوں کی لازوال قربانیوں کے باعث ہمیں آزاد خطہ پاکستان نصیب ہوا۔لاکھو ں کی تعداد میں مسلمانوں کو ہجرت کے تکلیف دہ مرحلے سے گزرنا پڑا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ باب پاکستان کا منصوبہ مسلمانوں کی ہجرت اور قربانیوں کی یاد تازہ کرے گا۔ منصوبے کی اسی تاریخی اہمیت کے پیش نظر اس پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ اراکین صوبائی اسمبلی میاں نصیر، یاسین سوہل، چیف سیکرٹری، متعلقہ سیکرٹریز پریس سیکرٹری وزیراعلیٰ، ایم ڈی نیسپاک، کمشنر لاہور ڈویژن اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید : صفحہ اول