موبائل فون کمپنیوں کی تمام انعامی سکیمیں غیرقانونی قرار ،پی ٹی اے کوکارروائی کا حکم

موبائل فون کمپنیوں کی تمام انعامی سکیمیں غیرقانونی قرار ،پی ٹی اے ...

 لاہور(نامہ نگار خصوصی )سپریم کورٹ نے موبائل فون کمپنیوں کی تمام انعامی سکیمیں غیرقانونی قرار دیتے ہوئے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کو اس غیر قانونی عمل میں شامل کمپنیوں کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیاہے۔مسٹر جسٹس انور ظہیر جمالی پر مشتمل تین رکنی بنچ کی طرف سے جاری تفصیلی فیصلے میں قرار دیا گیا ہے کہ موبائل کمپنیوں کوانعامی سکیموں کی آڑ میں سادہ لوح عوام کے ساتھ فراڈ کی اجازت نہیں دی جاسکتی ، سپریم کورٹ نے مزید قرار دیا ہے کہ تعزیرات پاکستان کی دفعہ 294(اے) اور( بی) کے تحت شہریوں کو کسی قسم کی لاٹری یا انعامی سکیم کی طرف راغب کرنا جرم ہے، موبائل کمپنیاں سادہ لوح عوام کواپنی طرف راغب کرنے کے لئے لاٹری اورانعامی سکیموں کے لئے ایس ایم ایس بھجواتی ہیں اور بھاری منافع کماتی ہیں، موبائل کمپنیوں کی یہ انعامی سکیمیں غیرقانونی اور سادہ لوح عوام کے ساتھ فراڈ ہے، پی ٹی اے نے تمام موبائل کمپنیوں کو نوٹسز بھجواتے ہوئے حکم دیا تھا کہ کمپنیوں کی انعامی سکیموں کے خلاف صارفین کی شکایات بڑھ رہی ہیں ، اس لئے موبائل کمپنیاں فوری طور پر یہ انعام سکیمیں روکیں، موبائل کمپنیوں نے سپریم کورٹ میں پی ٹی اے کے نوٹسز کو چیلنج کرتے ہوئے استدعا کی تھی کہ پی ٹی اے موبائل کمپنیوں کو آزادنہ کاروبار کرنے سے روک رہی ہیں تاہم سپریم کورٹ نے کمپنیوں کی درخواستیں مسترد کرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ پی ٹی اے موبائل کمپنیوں کو آزادنہ کاروبار کرنے سے نہیں بلکہ غیرقانونی طریقے سے کاروبار کرنے سے روک رہا ہے جس کی قانون پی ٹی اے کو اجازت دیتا ہے۔

مزید : صفحہ آخر