اجرت کے قانون پرعمل درآمد کی رپورٹ طلب، لیبر انسپکٹر بھتہ لیکر واپس آجاتے ہیں: سپریم کورٹ

اجرت کے قانون پرعمل درآمد کی رپورٹ طلب، لیبر انسپکٹر بھتہ لیکر واپس آجاتے ...
اجرت کے قانون پرعمل درآمد کی رپورٹ طلب، لیبر انسپکٹر بھتہ لیکر واپس آجاتے ہیں: سپریم کورٹ

  

اسلام آباد (آئی این پی)سپریم کورٹ نے وفاق اور چاروں صوبوں سے کم از کم اجرت کے قانون پر عمل درآمد سے متعلق رپورٹ طلب کرلی اور ریمارکس دئیے ہیں کہ مقررہ اجرت کی ادائیگی حکومتوں کی ذمہ داری ہے، معائنہ کرنے والے لیبر انسپکٹر بھتہ لے کر واپس آجاتے ہیں‘اگر مزدوروں کو مقررہ اجرت ادا نہیں ہورہی تو پھر قانون ہی تبدیل کریں۔

 جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے کم از کم اجرت کے قانون پرعمل درآمد سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ مقررہ اجرت کی ادائیگی حکومتوں کی ذمہ داری ہے اور کم از کم اجرت کے قانون پر عمل درآمد سے متعلق رپورٹ اور اجرت کے حوالے سے شکایات کا ریکارڈ طلب کرتے ہوئے سماعت تین ہفتوں کے لئے ملتوی کردی۔

مزید : انسانی حقوق