امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کو ایک ارب ڈالر کے فوجی سامان کی فروخت کی منظوری دےدی

امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کو ایک ارب ڈالر کے فوجی سامان کی فروخت کی ...
امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کو ایک ارب ڈالر کے فوجی سامان کی فروخت کی منظوری دےدی

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کو ایک ارب ڈالر کے فوجی سامان کی فروخت کی منظوری دے دی جس میں 15وائپر ہیلی کاپٹرز ،ایک ہزار ہل فائر میزائل اور دیگر امریکی اسلحہ شامل ہے ، محکمہ خارجہ نے پاکستانی درخواست منظور کر تے ہوئے ہوئے کانگریس کو مطلع کردیا ہے تاہم ابھی کانگریس سے اس کی توثیق ہونا باقی ہے۔

امریکی اخبار”وال اسٹریٹ جرنل“ کے مطابق پاکستان کی طرف سے دی گئی درخواست میںامریکی ساختہ حملہ آور ہیلی کاپٹرز، میزائل اور قبائلی علاقوں میں عسکریت پسندوں کے خلاف لڑائی کے لئے دیگر فوجی سازوسامان ہے جن کا تخمینہ ایک بلین ڈالرہے۔رپورٹ کے مطابق امریکی دفاعی کمپنیاں پاکستان کو ہتھیار فروخت کرنے کےلئے تین طرح کی رسہ کشی میں مصروف ہے ،ایک طرف روس اور چین ہے تو دوسری طرف ہمسایہ ملک بھارت کی بھی ناراضگی سے امریکہ پہلو تہی کر رہا ہے اور بڑی اسلحہ درآمد مارکیٹ کو بچا نے کی کوشش میں ہے۔

پینٹاگون کا کہنا ہے کہ پاکستان نے ٹیکسٹران کی بل آرمز کے تیار کردہ پندرہ AH-1Z وائپر ہیلی کاپٹرز،لاک ہیڈ مارٹن کارپوریشن کے ایک ہزار ہل فائر میزائل اور متعدد دیگر مواصلات اور تربیت کا دفاعی سامان کی درخواست کی ہے۔کانگریس کو دیئے گئے ایک نوٹیفکیشن کے مطابق اس دفاعی سازوسامان کی مالیت952ملین امریکی ڈالر ہے، کسی بھی ملک کو فوجی اسلحے کی کسی بھی فروخت کےلئے کانگریس سے منظوری کی ضرورت ہے۔

امریکی ڈیفنس سیکیورٹی کو آپریشن ایجنسی کا کہنا ہے کہ ہیلی کاپٹر اور ہتھیاروں کے نظام کی مجوزہ فروخت کا مقصد جنوبی ایشیا میں انسداد دہشت گردی اور انسداد بغاوت کی کارروائیوں کے خلاف پاکستانی فوجی صلاحیتوں میں اضافہ کرنا ہے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں