ہوائی سفر کے بارے میں وہ تمام باتیں جو آپ کے ذہن میں ہیں

ہوائی سفر کے بارے میں وہ تمام باتیں جو آپ کے ذہن میں ہیں
ہوائی سفر کے بارے میں وہ تمام باتیں جو آپ کے ذہن میں ہیں

  

نیویارک(نیوزڈیسک)ہوائی جہا ز کا سفر ہم سب کے لئے ایک پرلطف اور دلچسپ تجربہ ہوتا ہے لیکن ساتھ ہی ہمارے ذہن میں کچھ سوالات ہمیشہ گردش کرتے رہتے ہیں کہ جہاز کو سٹارٹ کیسے کیا جاتا ہے، دوران پرواز جہاز کا دروازہ کھولا جا سکتا ہے،35ہزار فٹ کی بلندی پر پائلٹ سوتا بھی ہے یا نہیں ۔آئیے آپ کو ان سوالات کے جواب دیتے ہیں۔

جہاز کو سٹار ٹ کرنا

جہاز کو گاڑی کی طرح چابی سے سٹارٹ نہیں کیا جاتا بلکہ یہ گاڑی سے تھوڑا سا پیچیدہ عمل ہے۔کپتان پیرز ایپل گارتھ کا کہنا ہے کہ تیل ڈالنے کے بعد ایک ائیر سٹارٹ موٹر جہاز کے انجن کو گھماتی ہے جس کے بعد جہاز سٹارٹ ہوجاتا ہے۔پائلٹ کو چند سوئچ اور لیور گھمانے پڑتے ہیں اور جہاز بغیر کسی چابی کے سٹارٹ ہوجاتا ہے۔

مزید پڑھیں: بھارت میں گائے کے بعد حکومت نے بکرے کے مذبح پر بھی پابندی کاعندیہ دیدیا

ہوائی عملے کا کھانا

جہاز کے پائلٹوں کو اکانامی کلاس جیسے مسافروں کا کھانا نہیں دیا جاتا کیونکہ اس طرح انہیں معدے کی انفیکشن ہونے کا امکان ہوتا ہے لہذا نہیں بزنس کلاس مسافروں کا بہترین کھانا مہیا کیا جاتا ہے۔مسافروں کی طرح فضائی عملے کو یہ سہولت ہوتی ہے کہ وہ اپنا کھانا گھر سے بھی لے کر آسکتے ہیں۔

ہوائی عملہ کہاں سوتا ہے؟

لمبی مسافت طے کرنے والے طیاروں میں پائلٹوں کے لئے کیبن موجود ہوتے ہیں لہذا جب انہیں نیند آتی ہے تو وہ کیبن میں جاکر سوجاتے ہیں۔دس گھنٹے تک کی فلائیٹ میں دو پائلٹ ہوتے ہیں لیکن اگر دورانیہ اس سے طویل ہو تو ایک زائد پائلٹ بھی ہمراہ ہوتا ہے تاکہ وہ بآسانی نیند پوری کرسکیں۔ائیر بسA380میں ڈیک کے نیچے کیبنز بنے ہوئے ہیں جہاں فضائی میزبان اور عملہ اپنی نیند پوری کرتا ہے۔

ٹوائلٹ اگر بھر جائے؟

ٹوائلٹ میں ٹینکس ہوتے ہیں جن میں تمام انسانی فضلہ جمع ہوتا رہتا ہے ،لمبی پروازوں سے قبل عملہ ٹوائلٹس کے ٹینک کو مکمل خالی کرواتا ہے تاکہ دوران پرواز دشواری پیش نہ آئے اور اگر راستے میں ٹینکس مکمل طور پر بھر جائیں تو پھر ٹوائلٹ کو بند کردیا جاتا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ایسا کم ہی ہوتا ہے کہ ٹوائلٹ بھر جائے لیکن اگر ایسا ہوجائے تو اسے بند کردیا جاتا ہے اور اگر جہاز کے تمام ٹوائلٹ بھر جائیں تو پھر پرواز کو اتارا بھی جا سکتا ہے۔

کتنا ایندھن درکار ہوتا ہے

ایک جیٹ طیارے کو ایک گھنٹے کی پرواز کے لئے تقریباً1100لیٹر ایندھن کی ضرورت ہوتی ہے۔پرواز کے وقت کو مدنظر رکھتے ہوئے ایندھن ڈالا جاتا ہے لیکن ہمیشہ دھیان رکھا جاتا ہے کہ ایندھن ضرورت سے زیادہ موجود رہے تاکہ کسی بھی طرح کی پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

اگر جہاز کا دروازہ دوران پرواز کھل جائے

اکثر لوگ اس خوف کا شکار رہتے ہیں کہ کہیں جہاز کا دروازہ ہی نہ کھل جائے لیکن ایسا ممکن نہیں۔اس کی وجہ یہ ہے کہ جہاز کے اندر پریشر باہر کی نسبت بہت زیادہ ہوتا ہے لہذا کسی بھی صورت دروازہ نہیں کھلتا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ کہ دنیا کا طاقتور ترین انسان بھی اس دروازے کو نہیں کھول سکتااور جب جہاز لینڈ کر تا ہے تو اس وقت باہر اور اندر کا پریشر برابر ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے دروازہ بآسانی کھل جاتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس