شرٹ ٹراؤزر میں ڈالنے کا درست طریقہ،مردوں کیلئے انتہائی ضروری معلومات

شرٹ ٹراؤزر میں ڈالنے کا درست طریقہ،مردوں کیلئے انتہائی ضروری معلومات
شرٹ ٹراؤزر میں ڈالنے کا درست طریقہ،مردوں کیلئے انتہائی ضروری معلومات

  

نیویارک(نیوزڈیسک)شرٹ اور پینٹ ہر مرد پہنتا ہے لیکن بعض اوقات شرٹ کو باہر رکھا جاتا ہے اور اکثر شرٹ کو پینٹ کے اندر ڈال دیا جاتا ہے ۔اکثر لوگوں کو پینٹ کے اندر شرٹ کرنے کا درست سلیقہ ہی نہیں آتا اور انہیں شرمندگی بھی اٹھانا پڑ جاتی ہے۔کچھ شرٹس کے کنارے نیچے سے ایسے ہوتے ہیں جنہیں پہنتے ہوئے پینٹ سے باہر رکھا جاتاہے اور کچھ کو اندر ڈالنا ضروری ہوتا ہے۔آئیے آپ کو ایسی کچھ مفید معلومات سے آگاہ کرتے ہیں۔

پولو شرٹ:آپ چاہیں تو ان شرٹس کو پینٹ کو باہر رکھ سکتے ہیں لیکن اسے اندر رکھا جائے تو انسان زیادہ پروقار لگتا ہے۔

گول کالر:اگر کوٹ کے نیچے ان شرٹس کو پہنا جائے تو پینٹ کے اندر ضرور کرنا چاہیے ورنہ آپ کی مرضی ہے کہ اس شرٹ کو اندر رکھا جائے یا باہر ۔

ہوائین شرٹس:اپنے شوخ پرنٹ کی وجہ سے ہمیشہ ایسی اور ان سے ملتی جلتی شرٹس کو پینٹ سے باہر رکھیں اور اگر آپ انہیں پینٹ کے اندر ڈالیں گے تو لوگ آپ کا احمق سمجھیں گے۔

مزیدپڑھیں:دھوکے باز عاشق کا پول 17 محبوباﺅں نے کھول دیا

ڈریس شرٹ: اس شرٹ کو ہمیشہ پینٹ کے اندر رکھاجائے کیونکہ اگر آپ اسے پینٹ سے باہر رکھیں گے تو یہ ایک عام سا ڈریس لگے گا۔

شرٹ کو ٹراﺅزر کے اندر کرنے کا درست طریقہ:

جب بھی شرٹ کو پینٹ کے اندر کریں تو اس بات کا خاص خیال رکھیں کہ آپ کی شرٹ کی بٹن والی لائین اور پینٹ کی بیلٹ کے بکل ایک ہی سیدھ میں ہوں۔ایسا ہرگز نہ کریں کہ بٹن کی لائین اور بیلٹ کے نکل میں عدم توازن ہو۔اکثر ایسا بھی ہوتا ہے کہ آپ کی شرٹ پینٹ میں جا کر خراب بھی ہوجاتی ہے اور آپ کو بار بار اسے سیدھا کرنا پڑتا ہے۔ایسے میں آپ کو چاہیے کہ ہمیشہ جب بھی کپڑے پہنیں تو اپنے انڈروئیر میں اپنی بنیان ڈالیں اور اس کے بعد شرٹ پہنیں۔جب پینٹ پہنیں تو اس میں شرٹ کو اندر کریں،ایسی صورت میں آپ کی قمیض بہت جلد نہیں خراب ہوگی۔

آدھی شرٹ پینٹ کے اندر

ایک سٹائل یہ بھی ہے کہ آدھی قمیض کو پینٹ کے اندر رکھا جائے اور آدھی کو پینٹ سے باہر۔یہ سٹائل نوجوانوں میں کافی پسند بھی کیا جاتا ہے۔اس کا طریقہ یہ ہے کہ اپنی قمیض کا پچھلا حصہ پینٹ میں رکھیں اور شرٹ کا اگلا حصہ (اکثربائیں والا)پینٹ سے باہر اور دائیں والا اندر رکھیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس