بھارت کااپنے شہریوں کی آنکھوں میں مرچیں ڈالنے کا منصوبہ،ڈرون استعمال ہوگا

بھارت کااپنے شہریوں کی آنکھوں میں مرچیں ڈالنے کا منصوبہ،ڈرون استعمال ہوگا
بھارت کااپنے شہریوں کی آنکھوں میں مرچیں ڈالنے کا منصوبہ،ڈرون استعمال ہوگا

  

نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے شہر لکھنؤکی پولیس مشتعل مظاہرین کے خلاف مرچوں کا چھڑکاؤ کرنے والے ڈرون استعمال کرنے کے منصوبے پر کام کر رہی ہے ۔ بھارتی اخبارانڈین ایکسپریس کے مطابق لکھنو پولیس کی جانب سے خریدے گئے ڈرون دو کلو گرام وزن اٹھا سکتے ہیں۔

اخبار کے مطابق سینئر سپرنٹنڈنٹ یاشسوی یادو کا کہنا تھا کہ ”ہم مشتعل مظاہرین کو ان ڈرونز کے ذریعے مرچوں کا سپرے پھینک کر کنٹرول کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں“۔ ایس پی یادو کا مزید کہنا تھا کہ یہ طریقہ لاٹھی چارج سے ’کم ناگوار‘ ہو گا اور پولیس کو امید ہے کہ اس سے زیادہ موثر بھی ثابت ہو گا۔اخبار کے مطابق اتر پردیش کے دیگر علاقوں میں ڈرونز کا استعمال فضائی سرویلنس کیلئے کیا جاتا ہے تاہم ہجوم کو کنٹرول کرنے کیلئے اس کا استعمال پہلی بار ہو گا۔

بھارتی میڈیا کے بعد سوشل میڈیا پر خبر عام ہونے پر کچھ لوگوں نے اسے مثبت قدم قرار دیا ہے تاہم کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ مشتعل ہجوم میں شامل افراد ان ڈرونز کو مار گرانے کی کوشش کریں گے۔ ٹائمز آف انڈیا کی ویب سائٹ پر ایک شخص نے لکھا کہ اس منصوبے پر ’مزید غور‘ کرنا چاہئے کیونکہ کسی کو مرچوں کے سپرے سے ٹارگٹ کرنے کیلئے ڈرون کو کافی نیچا اڑنا پڑے گا جس کے باعث یہ تباہ کیا جا سکتا ہے۔ایک شخص کا کہنا تھا کہ’ کیا ہجوم پر، چاہے وہ مشتعل ہی کیوں نہ ہو، مرچوں کا سپرے پھینکنا قانون کے دائرے میں آتا ہے؟ یہ سپرے علاقے میں رہنے والے دیگر لوگوں کو اور راہگیروں کو بھی متاثر کرے گا جن کسی بے قابو ہجوم کا حصہ نہیں ہوں گے۔‘

مزید : انسانی حقوق /اہم خبریں