مٹہ ،کسٹم ایکٹ کیخلاف عوام او ر تاجر برادری سراپا احتجاج

مٹہ ،کسٹم ایکٹ کیخلاف عوام او ر تاجر برادری سراپا احتجاج

مٹہ (نمائندہ پاکستان )مٹہ کے عوام، تاجربرادری نے کسٹم ایکٹ کا نفاظ مسترد کردیا شدید مخالفت کا اعلان آج مٹہ بازار مکمل طور پر بند ہوگی۔ ملا کنڈ میں کسٹم ایکٹ کیخلا ف تا جر برادری نے میڈیا فورم سے اپنی اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہمارے ساتھ حکومت کا ظالمانہ فیصلہ ہے جس کے ہم بھر پور مخالفت کرتے ہیں حکومت ہم پر رحم کرکے اپنا فیصلہ واپس لے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں پر دہشت گردی، 2010 کی سیلاب اور حالیہ شدید بارشوں نے تحصیل مٹہ کو بری طرح متاثر کیا ہے ہزاروں ایکڑ قیمتی اراضی دریا برد ہوئے بہت سے مکانات کو نقصان پہنچا بہت سے لوگ بے گھر ہوئے لیکن حکومت نے یہاں پر ترقیاتی کاموں کے بجائے ہم پرمزید ٹیکس کابوجہ ڈالا جارہاہے اس فورم سے سماجی رہنما وتاجر اختر علی خان نے کہا سوات فری ٹیکس زون ہے یہاں شہر وں جیسے کاربار نہیں سوات باالخصوص مٹہ کے عوام کا زیادہ تر لوگ یا تو بیرونی ملک محنت مزدوری یا کھیت باڑی کا کام کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ والی سوات نے1969 جو معاہدہ کیا تھا وہ حکومت بھول گئی جس میں صاف لکھا گیا ہے کہ سوات فر ی ٹیکس زون ہوگی اور یہاں کے عوام سے رائے لی جائے گی حکومت جو بھی فیصلہ کرے گی اس پر عوام کو اعتماد میں لیا جائے گا۔ مگر آفسوس کی بات ہیں کہ یہاں پر پہلے ہی سے غریبی ، بروزگاری کا عالم ہے ٹیکس سے بروزگاری میں مزید اضافہ ہوگا۔ فورم سے نائب ناظم صادق خان، ریاض علی خان، سرباز خان، یوتھ کونسلر حیدر علی خان، اکبر حسین ، گل زمان، غلام قدر، کسان کونسلر بہادر خان ملنگے نے بھی میڈیا فورم سے اظہارے خیال کیا اور کسٹم ایکٹ کا نفاظ مٹہ سوات کے غریب عوام کے ساتھ ظالمانہ فیصلہ قراردیا۔ اور کہا کہ ملاکنڈڈویثرن اور مٹہ کے عوام اس ناانصاف فیصلے کو مسترد کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ آج ہونے والا ہڑتال میں عوام بھر پور حصہ لینگے۔اور اگر حکومت اس کے باجود بھی عوام کا فیصلہ ماننے سے انکاری ہوئے تو ملا کنڈ دویژن کے غیورعوام کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے جس کی تمام ذمداری مرکزی حکومت اور گورنر خیبر پختونخواہ پر ہوگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...